آب وہوا کی تبدلی مردوں اور عورتوں کی شرح میں تبدیلی کا سبب بن سکتی ہے

climate جاپان میں ہونے والی ایک نئی تحقیق کے مطابق، آب و ہوا کی تبدیلی کچھ ملکوں میں پیدا ہونے والے لڑکوں اور لڑکیوں کے تناسب میں تبدیلی کا سبب بن سکتی ہے۔تحقیق کاروں کے مطابق بدلتی ہوئی آب و ہوا کے سبب ممکن ہے کہ مردانہ جینزبری طرح متاثر ہو جائے۔
1970ء کی دہائی سے اب تک درجہ حرارت میں معمول سے بہت زیادہ اتار چڑھاؤجاپان میں خاصا عام ہو گیا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ مردانہ جینز کی اموات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے۔ لیکن خاص بات یہ ہے کہ مردانہ جینز کی شرح اموات زنانہ جینز کی اسی شرح سے کہیں زیادہ ہے۔
1970ء سے لے کر اب تک پیدا ہونے والے لڑکوں اور لڑکیوں کی شرح میں بھی تبدیلی آرہی ہے۔ لڑکوں کی پیدائش بتدریج کم جبکہ لڑکیوں کی پیدائش بتدریج بڑھتی جا رہی ہے۔
یہ رجحان ماہرین کو یہ تجویز کرنے پر ابھار رہا ہے کہ آب و ہوا کی گرمی یا شدت مردانہ جینز پر منفی اثرات کا ایک سبب ہو سکتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار جاپان کے شہر اکو میں قائم ایم اینڈ کے ہیلتھ انسٹیٹیوٹ کے ایک محقق، ڈاکٹر میساؤ فکوڈا نے کیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *