ڈی جی آئی ایس آئی افغان صدر ملاقات کی باتیں منظر عام پر آگئیں!

Image result for ‫نوید مختار اشرف غنی ملاقات‬‎

کابل -افغان صدر اشرف غنی نے دورہ پاکستان کی دعوت کو مسترد کر کے شرط عائد کی ہے کہ افغانستا ن پر حملوں میں ملوث ملزمان کی حوالگی تک پاکستان نہیں جاﺅں گا۔ افغان صدر کے نائب ترجمان دوا خان مینہ پال کے مطابق افغان صدر اشرف غنی نے دورہ پاکستان کی دعوت مسترد کر دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغان صدر نے پاکستان کے پارلیمانی وفد اور آئی ایس آئی کے سربراہ سے ملاقاتوں میں دورہ پاکستان کی دعوت مسترد کرتے ہوئے کہا کہ میں تب تک پاکستان نہیں جاوں گا جب تک پاکستان مزار شریف، امریکن یونیورسٹی کابل اور قندھار حملوں کے ذمہ داروں کو افغانستان کے حوالے نہیں کرتے اور پاکستان میں موجود افغان طالبان کے خلاف عملی طور پر قدم نہیں اٹھاتے۔ تاہم پاکستان کے دفتر خارجہ یا عسکری حکام نے افغان صدر کی جانب سے دورے کی دعوت کے مسترد کرنے کے دعوے پر کوئی ردعمل نہیں دیا۔

افغان حکام نے بتایا کہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ سے ملاقات میں افغان صدر اشرف غنی نے افغانستان میں ہونے والے حالیہ حملوں کی تحقیقات سے متعلق بعض دستاویزات بھی پیش کیں اور پاکستان سے مطالبہ کیا کہ ان حملوں میں ملوث افراد کو افغانستان کے حوالے کیا جائے۔ حالیہ ایک ہفتے کے دوران پاکستان کے تین اعلیٰ عسکری و سیاسی وفود نے کابل کا دورہ کیا ہے۔ گذشتہ روز پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار نے ایک روزہ دورے کے دوران کابل میں افغان صدر اشرف غنی اور اپنے ہم منصب معصوم استانکزئی سے ملاقات کی جس میں دہشتگردی اور پاک افغان سرحد کی صورتحالسمیت دیگراہم امور پر تبادلہ خیال کیاگیا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *