فوج چمن روانہ، فضائیہ بھی الرٹ ، باب دوستی بند !

12

چمن ۔ افغانستان بھی بھارت کے نقش قدم پر چل پڑا ہے اور پاکستان کو آنکھیں دکھانے لگا ہے۔ چمن بارڈر پر افغانستان نے غیراعلانیہ جنگ چھیڑ دی ہے۔ افغان فورسز نے چمن کے سرحدی گاؤں میں بلااشتعال گولہ باری کی جس کے نتیجے میں متعدد معصوم شہری شہید ہو گئے ہیں۔ ایف سی اہلکاروں سمیت درجنوں زخمی بھی ہو گئے ہیں۔ پاک فوج کے تازہ دم دستے چمن بھیج دئیے گئے ہیں۔ پاک فضائیہ کو بھی الرٹ کر دیا گیا ہے۔ باب دوستی بھی بند کر دیا گیا ہے۔ وزیر اعظم نے افغان فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے زخمی اہلکاروں کی جلد صحتیابی کی دعا کی ہے۔

 افغان فورسز کی جارحیت کی فوٹیج بھی منظر عام پر آ گئی ہے ۔ فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ افغان اہلکار شہریوں کے گھروں کو مورچے بنا کر فائرنگ کر رہے ہیں۔ پاکستانی فورسز نے افغان فورسز کو کرارا جواب دیا جس کے نتیجے میں متعدد افغان اہلکاروں کی ہلاکت کی اطلاع ملی ہے۔

افغان جارحیت کے بعد پاک فوج کے تازہ دم دستے بھی سرحدی علاقے میں بھیج دیئے گئے ہیں۔ پاک فضائیہ کو بھی الرٹ کر دیا گیا ہے۔ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ افغان جارحیت کا نشانہ بننے والے ایف سی جوان مردم شماری ٹیم کی سکیورٹی پر مامور تھے۔ مردم شماری کے بارے میں افغان حکام کو آگاہ کیا گیا تھا۔

زخمیوں کو سی ایم ایچ اور سول ہسپتال کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔ افغان فورسز کی جارحیت کے بعد چمن بارڈر کو آمد و رفت کے لئے بند کر دیا گیا ہے۔ قلعہ عبد اللہ کے سرحدی دیہات میں مردم شماری روک دی گئی ہے اور آج چمن میں ہڑتال رہی۔ تمام سرکاری اور نجی سکول بھی غیرمعینہ مدت تک بند کر دیئے گئے۔ شہریوں کو سرحدی علاقوں سے نقل مکانی کی ہدایت کر دی گئی ہے:۔

 

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *