افغانستان نے حملہ کیوں کیا اور پاکستان کے دندان شکن جواب میں افغانستان کا کیا نقصان ہوا؟ آئی جی ایف سی نے سب بتادیا!

چمن -افغان فورسز کی جارحیت کے حوالے سے پریس بریفنگ دیتے ہوئے آئی جی ایف سی نے کہا کہ پاکستان کی جوابی کارروائی میں 50 سے زائد افغان فوجی مارے گئے جبکہ100 سے زائد زخمی ہوئے جبکہ ہمارے 2 جوان شہید اور 9 زخمی ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق چمن میں افغان بارڈر پولیس کی جانب سے فائرنگ کے واقعے پر پریس بریفنگ دیتے ہوئے آئی جی ایف سی میجر جنر ل ندیم نے کہا کہ پاکستانی فوج کی جوابی میں کارروائی میں افغانستان کو بھاری نقصان اٹھانا پڑا اور ان کے 50 سے زائد فوجی مارے گئے جبکہ 100  سے زائد زخمی ہونے کے ساتھ ان کی 5 پوسٹوں کو تباہ کردیا گیا۔ آئی جی ایف سی کا کہنا تھا کہ افغانستان کے نقصان پر خوشی نہیں ہے وہ ہمارے بھائی اور مسلمان ہمسائے ہیں، افغان فورسز نے پاکستانی علاقوں میں قبضے کی کوشش کی اورواقعے کی ذمہ دار افغان بارڈر پولیس ہے، جواب دینا ہماری مجبوری تھی اورسرحد کی خلاف ورزی کی کسی بھی صورت اجازت نہیں دیں گے۔

میجر جنرل ندیم نے دوٹوک اور واضح پیغام دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے بین الاقوامی بارڈر پر بحث نہیں ہوسکتی، افغان اور پاکستان کی ٹیمیں بارڈر سروے کریں گی اور کوشش کریں گے کہ اس مسئلے کو ہمیشہ کیلئے ختم کریں جبکہ مردم شماری سے پہلے افغان حکام کوآگاہ کردیا تھا۔ آئی جی ایف سی نے مزید کہا کہ افغانستان میں بھارت کے لوگ موجود ہیں جو منفی مشورہ دیتے ہیں، سیاسی قیادت نے واضح بیان دیا ہے کہ دلی اورکابل میں گٹھ جوڑ ہے، بارڈر بند ہونے کے باوجود افغانستان میں زخمی خواتین اور بچوں کی مدد کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ 5 مئی کو 2 بجکر20 منٹ پر افغان حکومت نے پاکستانی حکومت سے فائربندی کی درخواست کی جس کو ہم نے قبول کیا۔

آئی جی ایف سی کا کہنا تھا کہ افغان فورسزکا بھاری جانی نقصان ہوا، دونوں جانب آبادی کی وجہ سے بھاری ہتھیار استعمال نہیں کئے گئے، افغان فورسزپاکستانی علاقوں میں آئی، لوگوں کوانسانی ڈھال کے طور پر استعمال کیا اور پاکستانی علاقوں میں قبضہ کرنے کی کوشش کی، اگردوبارہ افغانستان نے اس قسم کا اقدام اٹھایا تواسے زیادہ بھاری جواب دیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ چمن میں ٹریفک معمول کےمطابق جاری ہے، سول انتظامیہ اور پی ڈی ایم اے نے اچھے انتظامات ہوئے ہیں،ہم چاہتے تو زیادہ فورسز سے علاقے کو بہت جلد خالی کرا سکتے تھے۔میجر جنرل ندیم نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ جب تک افغان فورسز کا رویہ درست نہیں ہوگا باب دوستی بند رہے گا :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *