نادیہ حسین کو لڑکیاں اپنی برہنہ تصاویر کیوں بھیج رہی ہیں؟ معروف ماڈل نے سارا راز کھول دیا!

نادیہ حسین — بشکریہ فیشن یونیورس

لاہور -پاکستان میں بہت سے نوجوان میڈیا انڈسٹری میں اپنا مستقبل سنوارنے کے سہانے سپنے دیکھتے ہیں لیکن انہی سپنوں کی تکمیل کیلئے بعض اوقات وہ ایسے لوگوں کے ہاتھ چڑھ جاتے ہیں جو انہیں کہیں کا نہیں چھوڑتے۔ یہ جعلی لوگ نوجوانوں کو بڑے اداکاروں اور صف اول کی ماڈلز کا نام استعمال کرکے کس طرح بلیک میل کرتے ہیں اس کی ایک کہانی سینئر ماڈل نادیہ حسین نے بھی شیئر کی ہے۔
ماڈل نادیہ حسین نے اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر ان لڑکیوں کے نام ایک کھلا خط لکھا ہے جو ان کے نا م پر دھوکہ کھا کر اب بلیک میل ہو رہی ہیں۔
نادیہ حسین نے لکھا ’حال ہی میں مجھے بتایا گیا ہے کہ کچھ لوگوں کی جانب سے ماڈل بننے کی خواہش میں مایوسی کا شکار لڑکیوں کو میرا نام استعمال کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ وہ اپنی برہنہ تصاویر بھیجیں، یہاں تک کہ میرا نام استعمال کرکے ان پاگل لڑکیوں سے ماڈلز بنانے کے سپنے دکھا کر فیس بک اکاﺅنٹس کے پاسورڈز بھی لیے گئے ہیں، اور سب سے مزے کی بات یہ ہے کہ وہ لڑکیاں جو ماڈلز بننا چاہتی ہیں انہوں نے اپنی برہنہ تصاویر بھی بھیج دیں‘۔

 نادیہ حسین نے ایسی لڑکیوں کو براہ راست مخاطب کرتے ہوئے کہا لڑکیو ! کیا تم پیدائشی احمق ہو یا بہت زیادہ نا امیدی کا شکار ہو، کیا تم سمجھتی ہو کہ جو شخص تمہیں شوبزنس میں چانس دے گا وہ واقعی تم لوگوں سے برہنہ تصاویر کا تقاضہ کرے گا؟ کچھ حقیقت پسند بن جاﺅ اور ہوشیاری دکھاﺅ، جو نجی ہے وہ نجی ہے اور اسے نجی ہی رہنا چاہیے۔ بعد میں جب تمہیں بلیک میل کیا جائے یا تمہارا استحصال کیا جائے تو اس بات پر شور کرنے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ تم خود ہی اس کی ذمہ دار ہو، تم نے خود ان لوگوں کو اپنے ساتھ ایسا کرنے کا موقع فراہم کیا۔ خدا کا واسطہ ہے کہ اپنے بیہودہ دماغ کا استعمال کرو اور یہ سمجھو کہ جب کوئی شخص تم سے برہنہ تصاویر کا تقاضہ کرتا ہے تو اس کے مقاصد کیا ہو سکتے ہیں اور اگر تم واقعی اپنی برہنہ تصاویر بھیجنا ہی چاہتی ہو تو بعد میں بلیک میلنگ کی شکایت نہ کرو۔
انہوں نے کہا کہ اگر میرا نام استعمال ہوا ہے، تو اس سے میرے نام کو کوئی فرق نہیں پڑے گا، کیونکہ آپ لوگوں کو خود ہی اصل اور نقل کا فرق دیکھنا چاہیے تھا، میں کتنے لوگوں کو روک سکتی ہوں کہ وہ میرا نام استعمال نہ کریں؟۔

اپنی نصیحت آموز تحریر کے آخر میں نادیہ حسین نے کہا آخر میں انتباہ دینا چاہتی ہوں کہ میں لڑکیوں کی پروموشن نہیں کرتی اور نہ ہی انہیں بطور ماڈل چانس دلواتی ہوں اور نہ ہی اس سلسلے میں رہنمائی فراہم کرتی ہوں۔ نہ ہی میں بیرون ملک کوئی فیشن شوز کرتی ہوں اور نہ ہی ڈیزائنرز سے پیسے لے کر بھاگتی ہوں۔ یہ میں نہیں ہوں جس سے تمہارا رابطہ ہوتا ہے کیونکہ میرا نام بیرون ملک بھی غلط طریقے سے استعمال کیا گیا ہے۔ برائے مہربانی کسی پر بھی میرا گمان نہ کریں اور پھر جب آپ حقیقت میں مجھ سے ملیں تو اپنے استحصال کا شکوہ نہ کریں ۔ اگر میں نے نئی لڑکیوں کو پروموٹ کرنے کا سلسلہ شروع کیا تو اس بابت اپنے تمام سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر باقاعدہ اعلان کروں گی :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *