مائیکل جیکسن کے قریبی دوست نے ہولناک انکشاف کردیا!

Image result for ‫مائیکل جیکسن‬‎

سڈنی -ہالی ووڈ کے معروف گلوکار مائیکل جیکسن نے مرنے سے ایک ہفتہ قبل اپنے قریبی دوست سے قتل کیے جانے کے شبہے کا اظہار کیا تھا۔ دنیا بھر کے مشہور پاپ گلوکار مائیکل جیکسن کو دنیا سے گزرے 8 سال ہوگئے ہیں اور اب بھی ان کی موت معمہ بنی ہوئی ہے جب کہ میڈیکل رپورٹس کے مطابق مائیکل جیکسن کی موت ادویات کے زیادہ استعمال  کے باعث  ہوئی ہے تاہم  ان کی بیٹی والد کی موت کو قتل قرار دیتی ہیں لیکن اب پاپ گلوکار کے انتہائی قریبی دوست کے حیران کن دعوے کے بعد ایک بار پھر مائیکل جیکسن کی موت پر سوالات اٹھ گئے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پاپ گلوکار مائیکل جیکسن کے دوست اورجرمن بزنس مین جیکب شیگن نے گلوکار کے اپنے  انتقال سے ایک ہفتہ قبل قتل کیے جانے کے خدشے کا اظہار کیا تھا۔ جیکب نے آسٹریلوی ٹی وی شو کے دوران بتایا کہ اپنی موت سے چند ہفتے قبل مائیکل جیکسن نے انہیں 13 پیغامات  بھیجے جس میں انہوں نے اپنی زندگی کو لاحق خطرات سے آگاہ کیا جب کہ ایک بار مائیکل جیکسن فون کر کے  روپڑے تھے اور اپنے قتل کیے جانے کے خدشے کا اظہار کیا تھا۔

جیکب شیگن نے کہا کہ  اپنے پیغامات میں مائیکل کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ مجھے جان سے مارنا چاہتے ہیں اسی لیے میں بہت خوفزدہ ہوں لہذا ان کو اس صورت حال سے نکالنے کے لیے ان کے ساتھ 3 روز گزارے جہاں انہوں نے چند خطوط مجھے تھمائے جن میں واضح نہیں تھا کہ انہیں کون قتل کرنا چاہتا ہے لیکن بعض خطوط میں  کنسرٹ  کرنے والی کمپنی ’’اے ای جی‘‘ کی طرف سے انہیں شدید دباؤ کا سامنا تھا جس کی وجہ سے وہ اکثر پریشان رہتے تھے۔

واضح رہے کہ پاپ گلوکار مائیکل جیکسن اور جیکب شیگن کے درمیان گہری دوستی تھی اور دونوں کے درمیان گزشتہ 20 سال سے دوستانہ تعلقات تھے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *