وہ وقت جب قائداعظم ایکٹر بننے کے لئے گئے !

download (3)

شاید بہت کم لوگ اس بات سے واقف ہوں کہ جب قائداعظم لندن بیرسٹری پڑھنے کے لیے گئے تو وہاں ایک ایکٹر کی ضرورت کا اشتہار آیا۔ اب قائداعظم کو بھی اپنی انگریزی دانی اور اپنی آواز پر ناز تھا اور وہ بھی وہاں چلے گئے وہاں تمام امیدوار گورے تھے جو ستر کے قریب تھے ۔ قائداعظم نے ایک مکالمہ پڑھ کر سنایا اور اتنے سارے امیدواروں میں جس کو چنا گیا وہ قائداعظم تھے ۔ قائداعظم اس انتخاب پر بہت خوش تھے اور وہ اپنا مستقبل ایک کامیاب اور نامور ایکٹر کا دیکھ رہے تھے ۔ انہوں نے اس کمپنی کا ڈرامہ سائن کر لیا اور گھر آکر اپنے والد کے نام خط لکھا کہ " میں اتنے زیادہ لوگوں میں سے منتخب کر لیا گیا ہوں اور ایک انٹرنیشنل تھیٹریکل کمپنی میں جگہ بنانے میں کامیاب ہو گیا ہوں "۔ اب ان کے والد پونجا جناح پرانی وضع کے آدمی تھے ۔ انہوں نے جوابی خط لکھا (کنفرم نہیں کہ وہ خط بذریعہ جہاز گیا یا تار کے ذریعے بھجوایا گیا ) اور اس میں کہا کہ تم کو جس کام کے لیے بھیجا گیا ہے تم اس کی طرف توجہ دو۔ یہ تم نے کیا نیا پیشہ اختیار کر لیا ہے ۔ خبردار اگر تم نے اس طرح کی کسی سرگرمی میں حصہ لیا تو ۔ قائد اعظم بڑے نیک اور تابع فرمان تھے چنانچہ خط ملتے ہی ان کو فکر پڑ گئی اور اس کمپنی کے مالک سے کہا کہ سر ! میں بہت شرمسار ہوں اور میں وعدہ کے مطابق پرفارم نہ کر پاؤں گا۔ انہوں نے پوچھا کہ آخر تمہیں ہوا کیا ہے ؟ انہوں نے کہا کہ سر میرے والد صاحب نے منع کیا ہے اور میرا اس طرح تھیٹر میں کام کرنا انہیں پسند نہیں ہے ۔ کمپنی کے مالک نے پوچھا کہ تمہارے والد کو کیا اعتراض ہے ۔ یہ تمہاری زندگی ہے اور تم جو چاہو پیشہ اختیار کر سکتے ہو۔ انہوں نے کہا کہ سر آپ نہیں سمجھیں گے ہماری زندگی میں والد بڑے اہم ہوتے ہیں اور میں معافی چاہتا ہوں :۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *