ایران نے امریکا کے سامنے ڈٹے رہنے کا اعلان کردیا!

Image result for angry iran president

 تہران -ایرانی صدر حسن روحانی نے نئی پابندیاں عائد کرنے پر امریکا کو جوابی کارروائی کی دھمکی دے دی۔ تاہم ان کا کہنا ہے کہ ایران، عالمی طاقتوں کے ساتھ ہونے والے جوہری معاہدے کی پاسداری کرے گا۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی ’اے ایف پی‘ کے مطابق حسن روحانی نے کابینہ اجلاس کے دوران کہا کہ ’ایران ہمیشہ اپنے بین الاقوامی وعدوں اور معاہدوں کی پاسداری کرے گا۔‘

تاہم ان کا کہنا تھا کہ ’اگر امریکا کسی بھی بہانے سے نئی پابندیاں عائد کرنا چاہتا ہے تو عظیم ایرانی قوم بھی اس کا بھرپور جواب دے گی۔‘ حسن روحانی نے کہا کہ ’ہم امریکا کی جانب سے کی گئی خلاف ورزیوں کو نہیں بھولیں گے اور ہم ان کے خلاف کھڑے رہیں گے۔‘

واضح رہے کہ ایرانی صدر کی جانب سے یہ بیان امریکا کی طرف سے بیلسٹک میزائل پروگرام کی حمایت پر18 ایرانی افراد اور کمپنیوں پر پابندیاں عائد کیے جانے کے بعد دیا گیا۔ تاہم امریکی محکمہ خارجہ کی طرف سے اس بات کا اعتراف کیا گیا تھا کہ ایران عالمی طاقتوں کے ساتھ ہونے والے جوہری معاہدے کی پاسداری کر رہا ہے۔

ایرانی صدر نے امریکا پر ’دہرے پن‘ کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ’ایران، امریکی شہریوں اور کمپنیوں پر پابندیاں عائد کرکے اس کا جواب دے گا، جنہوں نے ایرانی عوام اور خطے کے دیگر مسلمانوں کے خلاف کارروائی کی۔‘ ان کا کہنا تھا کہ ’ایک طرف امریکی انتظامیہ کانگریس کو، ایران کی جانب سے جوہری معاہدے پر مکمل عملدرآمد کی تصدیقی رپورٹ بھیجتی ہے، تو دوسری طرف یہ مختلف حیلے بہانوں سے ایران پر نئی پابندیاں عائد کر رہی ہے :-‘

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *