چین میں مسلمانوں پر ایسی حکومتی پابندی کہ آپ دنگ رہ جائیں گے!

جو شخص اس ایپلی کیشن کو انسٹال نہیں کرے گا اسے جیل بھیج دیا جائے گا، حکام — فوٹو : فائل

بیجنگ -چین نے مسلم اکثریتی صوبے سنکیانگ میں مسلمانوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے موبائلفونز میں ’’سرویلیئنس ایپ‘‘ ڈاؤن لوڈ کریں بصورت دیگر ان کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

ریڈیو فری ایشیا کی رپورٹ کے مطابق چین کی حکومت نے مسلم اکثریتی صوبے سنکیانگ میں نگرانی کا عمل مزید سخت کر دیا ہے اور چند روز قبل ایک نوٹیفکیشن بھی جاری کیا گیا ہے جس میں مسلمان شہریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنے موبائل فونز میں نگرانی کے لیے خاص طور پر تیار کی گئی ایپلی کیشن ’’جنگ وانگ ایپ‘‘ انسٹال کریں۔ حکام سنکیانگ کے دارالحکومت ارومچی سمیت دیگر علاقوں میں شہریوں کی چیکنگ کر رہے ہیں اور ان کے موبائل فونز میں مذکورہ ایپ نہ ہونے کی صورت میں خصوصی کیو آر کوڈ کے ذریعے ایپلی کیشن انسٹال کر رہے ہیں۔

چینی حکومت کی جانب سے جاری بیان کے مطابق یہ ایپلی کیشن موبائل فون میں موجود دہشت گردی یا غیر قانونی مذہبی ویڈیوز، تصاویر، کتابوں اور دیگر مواد کی موجودگی کا سراغ لگانے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ جس شخص کے موبائل میں ایسا کوئی مواد موجود ہوگا انہیں ہدایات دی جائیں گی کہ وہ اپنے موبائل سے یہ مواد حذف کردیں۔

چینی حکام کا کہنا ہے کہ جو شخص اس ایپلی کیشن کو انسٹال نہیں کرے گا یا کرنے کے بعد اسے ڈیلیٹ کردے گا اسے 10 دن کے لیے جیل بھیجا جائے گا۔ خیال رہے کہ سنکیانگ کی آبادی تقریباً8 کروڑ ہے جبکہ یہاں ترک نسل کے ایغور مسلمان بستے ہیں۔ رواں برس مارچ میں بھی حکام نے سنکیانگ میں لمبی داڑھی رکھنے اور نقاب پر پابندی عائد کردی تھی جبکہ جن شہریوں کے موبائل فون پر غیر ملکی ایپلی کیشنز جیسے واٹس ایپ وغیرہ موجود تھیں ان کے کنکشن منقطع کردیے گئے تھے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *