خطے کی ترقی کیلئے سارک کو فعال بنانا لازمی ہے، وزیراعظم نوازشریف

اسلام آباد -وزیر اعظم نواز شریف مالدیپ کے یوم آزادی کی تقریبات میں شرکت کیلئے مالے پہنچے۔ ایوانِ صدر میں ان کا پرتپاک استقبال کیا گیا۔ وزیر اعظم نواز شریف کو گارڈ آف آنر پیش کیا گیا اور سات توپوں کی سلامی بھی دی گئی۔ ایوانِ صدارت میں وزیر اعظم نواز شریف کے اعزاز میں طلباء نے ثفافتی شو پیش کیا۔ استقبالیہ تقریب میں پاکستان اور مالدیپ کے قومی ترانے بجائے گئے۔ مسحور کن دھنوں نے حاضرینِ محفل کے دل موہ لئے۔

مالدیپ کے صدر نے اپنی کابینہ اور دیگر حکام سے معزز مہمان کا تعارف کرایا۔ وزیر اعظم پاکستان نے بھی اپنے وفد کے ارکان کو مالدیپ کے صدر سے ملوایا۔ خاتونِ اوّل بیگم کلثوم نواز، مشیرِ خارجہ سینیٹر سرتاج عزیز اور سینیٹر پرویز رشید بھی وزیر اعظم کے ہمراہ تھے۔

وزیر اعظم کا دورہ مالدیپ تین روز پر محیط ہے۔ وزیر اعظم کے دورے کے دوران پاکستان اور مالدیپ میں متعدد معاہدوں پر دستخط بھی کئے جائیں گے۔


بعد ازاں وزیر اعظم نواز شریف اور مالدیپ کے صدر نے اپنے اپنے وفود کے ہمراہ مختلف باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ نواز شریف کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مالدیپ کے صدر عبداللہ یامین کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نواز شریف کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون پر بات چیت ہوئی۔ دونوں ملکوں نے فیصلہ کیا ہے کہ سول سروس، تعلیم، صحت اور سیاحت میں تعاون کو فروغ دیا جائے گا، عوامی روابط کے شعبوں کو بھی فروغ دیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اور مالدیپ علاقائی مسائل کے حل کیلئے تعاون کو جاری رکھیں گے اور دونوں ممالک ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے نمٹنے کا عزم رکھتے ہیں۔

اس موقع پر بات کرتے ہوئے وزیر اعطم نواز شریف نے کہا کہ مالدیپ کے قومی دن کے موقع پر منعقد ہونے والی تقریبات میں بطور مہمانِ خصوصی آمد پر نہایت خوشی محسوس ہو رہی ہے، بطور مہمان خصوصی مدعو کیا جانا میرے لئے باعث فخر ہے، ہم مالدیپ کی ترقی اور خوشحالی کیلئے دعاگو ہیں، مالدیپ کے صدر اسلام آباد میں سارک اجلاس کے انعقاد کے حامی ہیں، بھارت نے سارک کے منشور کے منافی کام کیا، خطے کی ترقی کیلئے سارک کو فعال بنانا لازمی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان کھیل، صحت، تعلیم اور انسدادِ منشیات میں تعاون جاری رہے گا، دوںوں ملکوں کے ورکنگ گروپس کی چار ذیلی کمیٹیاں بھی کام کر رہی ہیں، دوطرفہ تجارت کو بڑھانے کیلئے مشترکہ بزنس گروپس تشکیل دیئے گئے ہیں، پاکستان مالدیپ میں میڈیکل کالج کے قیام مین تعاون کرے گا، پاکستان کے عوام مالدیپ کے عوام کیلئے نیک تمنائیں رکھتے ہیں :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *