کون سی موبائل ایپ آپ کے موبائل کے لیے تباہ کن ہیں؟

Image result for mobile apps

اگر آپ اینڈرائیڈ فونز استعمال کرتے ہیں اور اکثر آپ کی بیٹری کا چارج بہت جلد ختم ہوجاتا ہے تو اس کی وجہ واٹس ایپ کو استعمال کرنا ہوسکتا ہے۔جی ہاں ایک نئی رپورٹ میں اینڈرائیڈ اسمارٹ فونز کے لیے ایسی بدترین ایپس کے نام سامنے آئے ہیں جو بیٹری لائف کے لیے تباہ کن ثابت ہوتی ہیں۔انٹرنیٹ سیکیورٹی فرم Avast کی تیار کردہ رپورٹ کے مطابق اگر اینڈرائیڈ صارفین اپنے فون کی بیٹری لائف بہتر بنانا چاہتے ہیں تو چند ایپس کو ڈیلیٹ کرکے ایسا ممکن ہے۔اس رپورٹ میں ڈیٹا ٹریفک ہوگنگ، اسٹوریج ہڑپ کرنے اور مجموعی کارکردگی متاثر کرنے والی ایپس کے نام بھی دیئے گئے ہیں۔اور اس میں کوئی حیرانی کی بات نہیں کہ بیٹری لائف اور اسٹوریج کے لیے تباہ کن ایپس میں فیس بک کی ایک نہیں کئی ایپس شامل ہیں۔ایسی ایپس جو فون آن ہوتے ہی خودکار طور پر کام شروع کرکے بیٹری لائف ختم کرتی ہیں ، ان میں فیس بک، واٹس ایپ میسنجر، گوگل میپ، وی چیٹ، ایپ لاک، ڈی یو بیٹری سیور، سام سنگ آل شیئر، سام سنگ سیکیورٹی پالیسی اپ ڈیٹ، بیمنگ سروس فار سام سنگ اور چیٹ آن وائس اینڈ ویڈیو چیٹ شامل ہیں۔

اسی طرح صارفین کی اپنی پسند کی وہ ایپس جو بیٹری لائف تیزی سے ختم کرتی ہیں، ان میں نیٹ فلیکس، اسپاٹیفی میوزک، اسنیپ چیٹ، کلین ماسٹر، لائن، مائیکرو سافٹ آﺅٹ لک، بی بی سی نیوز اور ای ایس فائل ایکسپلور فائل منیجر شامل ہیںجو ایپس ڈیٹا ہوگنگ کے لیے بدتر قرار دی گئیں، ان میں فیس بک، انسٹاگرام، یاہو جاپان، فائر فوکس براﺅزر فاسٹ اینڈ پرائیویٹ، واٹس ایپ میسنجر، فیس بک لائٹ، گوگل پلے ہوم اور ڈی یو بیٹری سیور ہیں۔اسٹوریج ہڑپ کرنے والی بدترین سائٹس میں فیس بک، انسٹا گرام، فیس بک میسنجر، گوگل میپ، گوگل کروم، فائر فوکس براﺅزر اور گوگل کوئیک سرچ باکس شامل ہیں۔


courtesy:dawn

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *