مردوں کے بھی مخصوص ایام ہوتے ہیں،نئی تحقیق

Image result for worried man

نیو یارک (نیوز ڈیسک) خواتین کی تولیدی زندگی کا ایک اہم پہلو ماہوار ایام ہیں جن کے دوران اکثر خواتین میں افسردگی، تلخی جیسی علامات بھی پیدا ہو جاتی ہیں لیکن انکشاف ہواہے کہ مردوں میں بھی یہ ماہوار تبدیلیاں رونما ہوسکتی ہیں۔ مشہور میگزین ’کاسمو پولیٹن ‘نے اس سلسلہ میں ڈاکٹر پائل ویرنا ڈو سے رابطہ کیا تاکہ مردوں کے موڈ میں اچانک تبدیلیوں کی تحقیق کی جاسکے۔معاملے کی جانچ کرنے پر معلوم ہوا کہ کچھ مردوں میں عورتوں کی طرح ماہواری کا عمل تو نہیں ہوتا لیکن ان میں بھی ٹیسٹا سٹی رون ہارمون کی مقدار کم ہونے پر مزاج کی ویسی ہی تبدیلیاں نظر آتی ہیں جیسی خواتین کی مخصوص آیام کے دوران نظر آتی ہیں۔ ان ہارمون کا لیول صبح کے وقت زیادہ ہوتا ہے لیکن دن گذرنے کے ساتھ ساتھ اس میں کمی واقع ہوتی ہے جس کی وجہ سے غصہ، افسردگی اور تلخی جیسی علامات رونما ہوسکتی ہیں۔ ناقص خوراک ، تھکاوٹ اورذہنی پریشانی جیسے عوامل بھی اس ہارمون یمں کمی کا باعث بنتے ہیں جس کا نتیجہ ویسا ہی ہوتا ہے جیسے خواتین کے ایام کے دوران مزاج کی تبدیلیاں سامنے آئی ہیں۔خواتین کی مخصوص کیفیات کو پی ایم ایس اور مردوں کی ان مخصوص کیفیات کو آئی ایم ایس کا نام دیا گیا ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *