کیا 70 سالوں میں سارے وزیر اعظم غلط تھے؟آئین بدلنا ہوگا، قانون بدلنا ہوگا!نواز شریف کا لاہور میں پرجوش خطاب

jal

لاہور: نواز شریف نے داتا دربار لاہور کے باہر تاحد نظر پھیلے عوام کے سمندر سے خطاب کرتے ہوئے مسکرتے ہوئے کہا کہ یہ آج لاہور میں کیا دیکھ رہا ہوں، میں نے لاہوریوں کا یہ منظر کبھی نہیں دیکھا- لاہور کے غیور باسیو! آپ نے مجھے وزیر اعظم بنا کر بھیجا تھا، اپنے ووٹ کی طاقت سے ، اللہ کے فضل و کرم سے آپ نے مجھے وزیر اعظم بنایا اور پانچ لوگوں نے مجھے نااہل قرار دے دیا-آپ کو منظور ہے؟ اس سوال کے جواب میں فضا عوام کے نعروں سے گونج اٹھی جس میں لوگ نہیں نہیں کے نعرے لگاتے رہے-نواز شریف نے کہا کہ آج چوتھے دن میں لاہور سے اسلام آباد آپ تک آیا ہوں، پاکستان کا بچہ بچہ سراپا احتجاج ہے کہ نواز شریف کو کیسے نااہل کردیا-لوگ پوچھتے ہیں کہ وہ کون سے لوگ ہیں جنہوں نے نواز شریف کو نااہل کیا، کیا وہ خود اہل ہیں- نااہل کرنے کی وجہ دیکھ لیں کہ میں نے اپنے بیٹے کی کمپنی سے تنخواہ کیوں نہیں لی-نہیں لی تو نہیں لی، آپ کون ہیں؟اگر لے بھی لیتا تو کیا حرج ہے اور نہیں لی تو کیا حرج ہے؟ کیا یہ وزیر اعظم کو نااہل کرنے کی معقول وجہ ہے؟ آپ کے وزیراعظموں سے یہ سلوک ہوتا ہے- ستر سالوں سے یہ سلوک ہورہا ہے- 2013 میں آپ نے مجھے ووٹ دیا اور کہا کہ نواز شریف بجلی نہیں آتی، پنکھا نہیں چلتا، چولہا نہیں جلتا۔میں نے کہا انشااللہ چولہا بھی جلے گا، پنکھا بھی چلے گا اور گھروں میں روشنی بھی آئے گی-آج ابھی چوتھا سال ہے اور بجلی آنا شروع ہوگئی ہے، گیس بھی آنا شروع ہوگئی ہے، یہاں ایک تو میٹرو بس چل رہی ہے اور اورنج لائن ٹرین بھی تیار ہوچکی ہے- غریبوں کو کتنی بڑی سہولت ملی ہے- یہاں غریب آدمی بیس بیس روپے میں پورے شہر کا سفر کرتا ہے- اس سے پہلے سینکڑوں روپے لگتے تھے-آج اللہ کے فضل و کرم سے سڑکیں بن رہی ہیں، ملک خوشحال ہورہا ہے، امن قائم ہورہا ہے۔جب اتنے اچھے کام ہورہوں تو وزیر اعظم کے ساتھ یہ سلوک کیا جاتا ہے؟نہیں، یہ ہمیں منظور نہیں ہے-اوسطا" ڈیڑھ ڈیڑھ سال ایک وزیر اعظم کی حکومت رہی- تین ڈکٹیٹر ملک کے تیس سال کھا گئے-پاکستان کو بدلنا ہوگا-میں نے لوگوں کے جو جذبات دیکھے ہیں یہ جذبہ ایک انقلاب کا پیش خیمہ ہے-اگر یہ انقلاب نہ آیا تو غریب ہمیشہ غریب رہے گا، کسی کو انصاف نہیں ملے گا ، ان کے گھروں میں خوشحالی دستک نہیں دے گی، بے روزگار بے روزگار ہی رہیں گے- ہماری قوم کی دنیا کی پست ترین قوم بن جائے گی-اس خطے میں پاکستان جیسا کوئی ملک نہیں جہاں عوام کے ووٹ کی کوئی قدر نہیں-کیا 70 سالوں میں سارے وزیر اعظم غلط تھے، کیوں نہیں ان کو مدت پوری کرنے دی گئی-یہ کون لوگ ہیں جو ووٹ کی توہین کرتے ہیں--جنہوں نے پاکستان کے ساتھ یہ تماشا کیا ، کیا ان کا احتساب ہونا چاہیے یا نہیں؟میں نے تو بڑی محنت سے کام کیا، پاکستان کی تعمیر کی-بجلی کے کارخانے بیس بیس مہینوں میں مکمل کیے- خون پسینہ بہا کر منصوبے مکمل کیے، ایسے ہی بجلی نہیں آرہی، اربوں کھربوں روپے ملک کا سرمایا بچایا-بجلی سستی بھی ہورہی ہے-یہ کون ہیں جو پاکستانی کی ترقی کو سبوتاژ کرتے ہیں- آپ جانتے ہیں ان سب کو، آپکو جرات کے ساتھ سٹینڈ لینا ہوگا-1971 میں یہ ملک دولخت ہوا، اللہ نہ کرے کہ اب ایسا ہو-میں آپ سے سوال پوچھنا چاہتا ہوں کہ یہ 2017 ہے، ہم 2013 میں آئے تھے، کیا 2013 اور 2017میں کوئی فرق ہے؟ 2017 کا پاکستان 2013 کے پاکستان سے بہتر ہے یا نہیں؟ نواز شریف کو شاباش ملنی چاہیے تھی یا سزا؟ کیا پھر نواز شریف کو نااہل ہونا چاہیے تھا؟ آپ بیس کروڑ عوام پاکستان کے مالک ہیں؟ چند لوگوں کی اجارہ داری اس ملک میں بیس کروڑ پہ حاوی نہیں ہونا چاہیے-بیس کروڑ عوام کی بھی کوئی حرمت ہے یا نہیں؟اس موقع پر عوام نے "رو عمران رو" کے نعرے لگائے تو نواز شریف نے کہا کہ "وہ" اس وقت آپ کو دیکھ رہا ہوگا اور وہی کررہا ہوگا جو آپ نعرے لگا رہے ہیں-نواز شریف نے کہا کہ میں جو کہتا ہوں وہ کرتا ہوں، میں آپ کے ووٹ کی حرمت کروا کے دکھاؤں گا، مجھے اپنی جان کی پرواہ نہیں ہے-میری جان آپ ہیں-یہاں بڑا دھوکا دینے والے آتے رہیں ہیں لیکن نواز شریف نے کبھی آپ کو دھوکا نہیں دیا- انہوں نے کہا کہ مجھے اقتدار کی لالچ نہیں بلکہ آپ اور آپ کے بچوں کی بہتری کی لالچ ہے-انہوں نے کہا کہ اب جب تک اس ملک کی تقدیر نہیں بدل جاتی میں گھر نہیں بیٹھوں گا-میری صرف ایک خواہش ہے کہ میرے اس ملک اور اس کے باسیوں کی تقدیر بدلے-ہمیں اس کے لیے نظام کوبدلنا ہوگا، اس نظام کو وائرس لاحق ہوگیا ہے، ہمیں اس کو ٹھیک کرنا ہے-تیس تیس سال سے مقدمات لٹکے ہوئے ہیں، نہ سماجی انصاف ہے نہ عدالتی انصاف ہے-ہم ایسا نظام لے کر آئیں گے کہ جس کے ساتھ زیادتی ہوگی اسے 90 دن کے اندر انصاف ملے گا-ہمیں نئے قانون لانے ہوں گے، ہمیں آئین بدلنا ہوگا، نظام بدلنا ہوگا- جو لوگ تعلیم کی فیس ادا نہیں کرسکیں گے ان کی فیس حکومت ادا کرے گی-پرسوں چودہ اگست ہے-آپ کے بزرگوں نے جس پاکستان کے لیے قربانیاں دی تھیں وہ آج تک نہیں بن سکا، ستر سالوں سے ہم بھٹک رہے ہیں-پاکستان لڑھک رہا ہے-کیا ہمارے ہمسایہ ممالک میں اس طرح کے حالات ہیں-آپ کو نواز شریف کا ساتھ دینا ہوگا-آج میں دعوے سے کہتا ہوں کہ میں انصاف کے لیے نکلا ہوں اقتدار کے لیے نہیں-نواز شریف کی نہیں عوام کی حکمرانی کے لیے نکلا ہوں، اپنے آپ سے سچا عہد کرواور مجھے بتاؤ کہ کیا انقلاب کے اس سفر میں نواز شریف کا ساتھ دو گے؟میرے ایجنڈے میں تھا کہ پاکستان مستحکم ہوجائے تو جن کے پاس اپنا گھر نہیں ہے ان کے لیے سستے داموں گھروں کا انتظام کیا جائے-اگر آپ نے ہمیں اور ہماری پارٹی کو موقع دیا تو ہم انقلاب لے کر آئیں گے-انہوں نے کہا کہ سینٹ کے چیئرمین نے کچھ تجاویز دی ہیں، میں ان کی تجاویز سے اتفاق کرتا ہوں اور اعلان کرتا ہوں کہ پی ایم اہل این ان سے اتفاق کرے گی، ہم نئے آئین کی تیاری میں ان کا ساتھ دیں گے-جہاں تیز ترقی ہورہی ہوتی ہے وہاں وزیر اعظم کو نااہل قرار دے دیا جاتا-نواز شریف نے بلوچستان دھماکے کے حوالے سے کہا کہ ہم کوئٹہ میں سویلین اور فوجی افسران کی ہلاکت پر دعا کرتے ہیں کہ اللہ انہیں جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور ان کی شہادت کو اللہ قبول فرمائے-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *