جڈی کا ساحل۔۔۔اہم سیاحتی مقام 

ظریف بلوچ 

zareef baloch
مکران کی ٹھاٹیں مارتا ہوا سمندر کے اندر سمندری مخلوق جوکہ ہیاں بسنے والے لوگوں کی روزگار کا وسیلہ ہے تو دوسری طرف مکران کے ساحلی بیچ لوگوں کی سیر و تفریح کا واحد ذریعہ ہیں.جن پر ریسرچ کے ساتھ ساتھ تاریخ پر جڑی داستانوں کو منظر عام پر لانا وقت کی ضرورت ہے.

ماضی کا تجارتی گیٹ وے پسنی جو کہ مکران کا معاشی حب ہوتا تھا اپنی خوبصورت ساحلی مناظر کی وجہ سے سیاحت کے لئے ایک اہم مقام ہے.مستانی کا صحرائی پوائنٹ ہو یا جڈی کا خوبصورت بیچ .پسنی کے عوام کی خوشیوں کو دوبالا کرنے کے لئے کافی ہیں.
پسنی مائیگیروں کی ایک قدیم بستی ہے اور زمانہ قدیم سے یہاں مچھیرے آباد ہیں جوکہ سمندر کی پیٹ چیر کر روزی روٹی کماتے ہیں.
Image result for pasni beach balochistan
پسنی شہر سے پانچ کلومیٹر دور جڈی بیچ واقع ہے.جڈی کے پہاڑ کے دامن میں واقع جڈی بیچ پسنی کے لوگوں کے لئے سیر و تفریح کا واحد مقام ہے اور ہیاں ٹھاٹیں مارتا ہوا سمندر کا منظر دلکش اور دلفریب ہوتا ہے.چھٹیوں یا عید کا موسم ہوتو مقامی لوگوں کے لئے یہ بیچ کسی جنت سے کم نہیں جہاں سیر و تفریح کے لئے آنے والوں کا رش ہوتا ہے.مکران کے دیگر علاقوں سے آنے والے لوگ اگر پسنی آتے ہیں تو جڈی بیچ کا دیدار ضرور کرتے ہیں.جڈی بیچ کے حوالے سے اپنے تاثرات بیان کرتے ہوئے مقامی صحافی غلام یاسین بزنجو کہتے ہیں ک ہیاں نہ صرف مقامی لوگوں کی رش ہوتا ہے بلکہ دور دراز سے آنے والے سیاح اس بیچ کی خوبصورتی سے لطف اندوز ہوتے ہیں اور بوریت ختم کرکے انجوائے کرتے ہیں..مقامی نوجوان صمد داؤد کا کہنا ہے کہ جڈی بیچ ہیاں کی اہم سیاحتی پوائنٹ ہے اور ایک خوبصورت بیچ ہونے کی وجہ سے لوگ ہیاں کی پرفضا ساحلی فضا سے خوب لطف اٹھاتے ہیں. پسنی کے سئنیر صحافی اور ادیب اکرم صاحب کہتے ہیں کہ جڈی جدی یا جودی کی بگڑی ہوئی شکل ہے جس کے معنی پہاڑ کے ہیں اور اسی پہاڑ کی وجہ سے علاقے کا نام جڈی رکھا گیا ہے اور یہ ایک قدیم اور تاریخی بیچ ہے.
جہاں بیچ ہو وہاں میرین لائف نہ ہو -ایسا ممکن نہیں.جڈی بیچ میرین لائف کے حوالے سے اہم ہے مگر ہیاں اب لوگوں کی رش اور شہر کی بڑھتی ہوئی آبادی کی وجہ سے میرین لائف پر منفی اثرات مرتب کئے ہیں..جا بجا پلاسٹک کی بوتلیں اور تھیلے پڑے ہوئے ہیں.ہیاں آنے والے لوگوں کی عدم توجہی اور میرین لائف کی اہمیت سے آگہی نہ ہونے کی وجہ سے اس بیچ کی خوبصورتی پر منفی اثرات مرتب ہوتے آرہے ہیں.
Related image
جڈی بیچ حکومتی عدم توجہی کا شکار ہے اس خوبصورت میں ٹورسٹ کے پروگرام کے حوالے حکومتی اقدامات نہ ہونے کی برابر ہے.جنت نظیر جڈی بیچ جو کہ ایک خوبصورت بیچ ہے ہیاں سیاحت کی فروغ کے لئے اقدامات کی ضرورت ہے.
حیاتیات کے ماہرین کا کہنا ہے جڈی بیچ میں سائبیریا سے نقل مکانی کرنے والے آبی پرندے وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں جو کہ سائبریا سے نقل مکانی کے بعد مکران کے مختلف ساحلی علاقوں کو اپنا عارضی مسکن بنادیتے ہیں .اس بیچ میں آبی نباتات بھی موجود ہیں جبکہ سی اسٹار اور دیگر سمندری مخلوق ہیاں پائے جاتے ہیں اور بیچ کے قریب مائیگیر شکار بھی کرتے ہیں.
جڈی بیچ کی خوبصورت کا ایک منظر ہیاں موجود حضرت خضر حیات کی ٹھکانہ ہے جو کہ بیچ پر موجود ہے .پسنی اور دیگر علاقوں سے آنے والے لوگ ہیاں منتوں اور مرادیں پورا کرنے آتے ہیں کیونکہ ہیاں کے لوگوں کا اس پر عقیدہ ہے اور یہ ٹھکانہ کافی پرانا ہے جو کہ ہیاں موجود ہے. مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اسی پہاڑ کے دامن میں حضرت خضر حیات عبادت کرتے تھے.اور مقامی روایت ہے کہ حضرت خضر حیات طوفان اور دیگر مشکل وقت میں سمندر میں موجود مائیگیروں کی حفاظت کرتے ہیں.

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *