معروف بھارتی اداکارہ مندانہ کریمی نے اپنی عریاں تصاویر شیئر کردیں

bharti

ممبئی (ویب ڈیسک)معروف بھارتی اداکارہ ایشاگپتاکے بعدبھارتی اداکارہ مندانہ کریمی جومعروف بھارتی ریلیٹی شوبگ باس میں شرکت کرچکی ہیں اوراپنی ناکام شادی کی وجہ سے بھی کافی مشہورہیں اس وقت پھرخبروں کی زینت بنی ہوئی ہیں اس دفعہ وہ اپنی شادی نہیں بلکہ اپنی برہنہ تصاویرسوشل میڈیاپرشیئرکرنے کی وجہ سے خبروں کی زینت بنی ہوئی ہیں ۔اداکارہ نے اپنی ایک برہنہ تصویرسوشل میڈیااکائونٹ انسٹاگرام پرشیئرکی ۔اداکارہ نے اپنی تصویرنہانے سے پہلے شاورکے نیچے کھڑے ہوکربنائی اوراسے سوشل میڈیاپرشیئرکردیا۔اداکارہ نے غیرضروری کامنٹس سے بچنے کے لیے اپنی تصویرکوایڈٹ کردیا۔جبکہ سوشل میڈیاسائٹ نے بھی تصویرکوسینسرکرتے ہوئے اداکارہ کی تصویر پردوبڑے بڑے سٹارلگادئیے۔جبکہ اداکارہ کی ناک پرخرگوش کی ناک جبکہ اس کے سرپرخرگوش کے کان لگادئیے گئے۔اس سے قبل بھارتی اداکارہ ایشاگپتاکی تصاویرمنظرعام پرآئی تھیں جس میں انہوں نے جرابوں کے سواکچھ بھی نہیں پہناہواتھا۔سوشل میڈیاصارفین کی جانب سے انہیں متعددبارتنقیدکانشانہ بنایاگیالیکن اب اداکارہ مندانہ کریمی کی تصویرکے بعدسوال اٹھناشرو ع ہوگئے ہیںکہ آخرانہیں اپنی برہنہ تصویرسوشل میڈیاپرپوسٹ کرنے کی ضرورت کیوں محسوس ہوئی ۔دوسری جانب اداکارہ اپنی شادی سے کا فی پریشان ہیں ۔انہوں نے اس سال اپنے شوہرسے معاملات طے کیے لیکن انہوں نے حال ہی میں انہوں نے اپنے شوہراورساس کے خلاف تشددکرنے کامقدمہ درج کرایاہے۔بھارتی خبررساں ادارے سے گفتگوکرتے ہوئے اداکارہ نے کہاکہ میں اپنے شوہرسے بہت پیارکرتی ہوں میں نے طلاق کے لیے عدالت کودرخواست دے دی ہے۔میں اس کوصرف یہ بتاناچاہتی ہوں کہ تم شادی کواتناہلکامت لو۔تم مجھے کنٹرول نہیں کرسکتے اورنہ ہی مجھے اپنے گھرسے باہرپھینک سکتے ہو۔میں اس کی بیوی ہو ں اورمجھے یہ سمجھ نہیں آرہی کہ وہ مجھے اپنے گھرمیں داخل کیوں نہیں ہونے دے رہا۔میں 7ہفتوں سے گھرسے باہررہائش پذیرہوں اورمیرے شوہرنے ہمارے ایک مشترکہ دوست کوبتایاکہ میں اسے اپنی زندگی میں واپس نہیں لا ناچاہتااورمیں اسے طلاق دے دوں گا۔اگروہ مجھے شادی کے چھ ماہ بعدہی طلاق دیناچاہتاہے تواس نے مجھ سے شادی ہی کیوں کی ۔اداکارہ نے اپنے شوہرسے ہرماہ دس لاکھ اورہرجانے کے طورپر2کروڑ روپے کامطالبہ کردیا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *