دو اور تین ٹانگوں والے سوئچز حیران کن فرق سامنے آگیا!

اسلام آباد -یہ بات آپ کے بھی مشاہدے میں آئی ہو گی کہ برقی آلات میں موجود سوئچ میں اکثر کی دوٹانگیں ہوتی ہیں جن میں سے ایک ٹانک گرم(کرنٹ)تار اور دوسری ٹھنڈی(نیوٹرل)کہلاتی ہے۔ سوئچ ساکٹ میں لگانے سے گرم اورٹھنڈی تار کی وجہ سے سرکٹ مکمل ہوتا ہے اور برقی آلہ بجلی موصول ہونے پر چلنے لگتا ہے لیکن اگر ان ٹانگوں میں سےایک ٹانگ بھی ٹوٹ جائے یا سوئچ سے نکال دی جائے تو سرکٹ مکمل نہیں ہو پاتا اور برقی آلہ اپنی کارکردگی دکھانے سے قاصر ہو جاتا ہے۔ یہ بات تو دو ٹانگوں والے سوئچ کی تھی مگر آپ نے اکثر یہ بھی دیکھا ہے کہ اکثر برقی آلات کے سوئچز تین ٹانگوں پر مشتمل ہوتے ہیں آخر یہ تیسری تار یا ٹانگ کس مقصد کے لئے لگائی جاتی ہے تو اس کا جواب بھی انتہائی آسان ہے۔ گر دوتاروں کی موجودگی میں ہمیں بجلی کا جھٹکا لگے تو سرکٹ مکمل ہونے کی وجہ سے یہ جھٹکا اس قدر شدید ہوتا ہے کہ ہماری جان بھی جاسکتی ہے اور اسی طرح اگر مین تار سے آنے والی بجلی کی تاروں کی سپلائی میں کسی بھی وجہ سے بہت زیادہ بجلی آجائے گھر میں موجود تمام اشیاءجل بھی سکتی ہیں اور گھر کوآگ لگنے کا خطربھی ہوسکتا ہے لہذا اس خطرے کو دور کرنے کے لئے ایک ارتھ کی تار بھی رکھی جاتی ہے جو کہ زمین کے اندر جاتی ہے۔ کرنٹ زیادہ آنے کی صورت میں یہ تار اپنا کام کرتی ہے اور زائد بجلی کو زمین میں لے جاکر گھر اور اشیاءکو جلنے سے بچاتی ہے۔ اگر ہمیں کرنٹ بھی لگ جائے تو یہ تار اپنا کام کرتے ہوئے جھٹکے کے اثر کو زائل کرتی ہے اور انسان کی زندگی محفوظ رہتی ہے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *