حکومت کا تعلیمی اداروں کا سیکورٹی آڈٹ کرانے کا فیصلہ!

لاہور -صوبائی دارالحکومت کے تمام تعلیمی اداروں کے سکیورٹی آڈٹ کا فیصلہ کر لیا گیا۔ پولیس کو 6535 تعلیمی اداروں کا آڈٹ دو روز میں مکمل کرنے کا ٹاسک مل گیا۔ حکام نے خصوصی ٹیمیں تشکیل دیدیں۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے پولیس کو احکامات جاری کئے گئے تھے کہ موسم گرما کی تعطیلات کے بعد تعلیمی ادارے کھلنا شروع ہو گئے ہیں اور ان کی سیکیورٹی کے انتظامات کو فوری طور پر مکمل کیا جائے۔ اس تناظر میں لاہور کے 6535 تعلیمی اداروں کا سیکیورٹی آڈٹ بھی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ان تعلیمی اداروں میں سے 336 اے پلس اور اے کیٹیگری کے ہیں۔ پولیس نے تمام تعلیمی اداروں کو سیکیورٹی ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد کرنے کا حکم جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اپنے اداروں میں فوری طور پر پینک سم کی موجودگی کو یقینی بنائیں۔

ایس پی سیکیورٹی عبادت نثار کے مطابق سکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں کو سیکیورٹی دینا اولین ترجیح ہے جبکہ کسی بھی ادارے کو سیکیورٹی انتظامات مکمل کئے بغیر کھولنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ حساس تعلیمی اداروں پر اضافی نفری بھی تعینات کی جا رہی ہے جبکہ ڈویژنل ایس پیز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ خود تمام انتظامات کو حتمی شکل دیں۔ ذرائع کے مطابق شہر میں حالیہ دہشتگردی کے واقعات کے بعد تعلیمی اداروں اور بچوں کی سیکیورٹی کے حوالے سے روزانہ کی بنیاد پر اجلاس کئے جا رہے ہیں اور تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کو بھی متحرک کیا جا رہا ہے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *