اسمارٹ فون استعمال کا حیران کن فائدہ سامنے آگیا!

یہ دعویٰ ایک نئی تحقیق میں سامنے آیا ہے— شٹر اسٹاک فوٹو

اگر تو اسمارٹ فونز سے بہت زیادہ تصاویر لینے کے عادی ہیں اور ہر وقت ہی کسی نہ کسی منظر کو کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کرتے ہیں، تو آپ کے لیے اچھی خبر ہے۔ اور وہ یہ کہ اس عادت کے نتیجے میں یاداشت کو بہتر بناتی ہے۔ یہ دعویٰ ایک نئی تحقیق میں سامنے آیا ہے۔

تحقیق میں بتایا کہ سوشل میڈیا کے لیے تصاویر کھینچنے کی عادت درحقیقت اس لمحے کی یاداشت کو بہتر کررہی ہوتی ہے۔ تحقیق میں یہ بھی دریافت کیا گیا کہ ایسے افراد کسی جگہ جانے پر وہاں کی تفصیلات دیگر کے مقابلے میں سات فیصد زیادہ بہتر انداز سے دہرا پاتے ہیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ اگر لوگ اپنی کھینچی جانے والی تصاویر کو دوبارہ نہ بھی دیکھیں تو بھی ان کی یاداشت میں ایسے افراد کے مقابلے میں نمایاں بہتری آتی ہے جو تصاویر کھینچنا پسند نہیں کرتے۔ محققین کا کہنا تھا کہ ایسے پرلطف تجربات کے ذریعے یاداشت کو بہتر بنانا اس وقت کارآمد ثابت ہوسکتا ہے جب اپنے پیشے یا تعلیم کے حوالے سے ایونٹس میں شرکت کرنے کے بعد وہاں کی تفصیلات ذہن نشین کرنا ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ ان افراد کے لیے اچھی خبر ہے جو مختلف ایونٹس کو انسٹاگرام کے لیے فلمانا پسند کرتے ہیں۔ تاہم تحقیق میں یہ بھی انکشاف کیا گیا کہ ایسے افراد کی تصویری یاداشت تو بہتر ہوتی ہے مگر بولے جانے والے الفاظ کی صلاحیت ضرور متاثر ہوتی ہے۔

محققین کے مطابق اسمارٹ فون کیمرے نے لوگوں کی زندگیوں کو اہم انداز سے بدلا ہے اور وہ تصاویر لینے کے عادی ہوتے جارہے ہیں، ایسے افراد کے لیے مختلف چیزوں کو یاد رکھنا دوسروں سے زیادہ آسان ہوتا ہے۔ اس تحقیق کے نتائج طبی جریدے سائیکولوجیکل سائنس میں شائع ہوئے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *