75کروڑ ڈالر کی لاٹری جیتنے پر اس خاتون نے نوکری چھوڑ دی!

میوس ونسزیک

امریکی تاریخ میں اب تک کی سب سے بڑی، یعنی تقریباً 75 کروڑ 80 لاکھ ڈالر کی لاٹری جیتنے والی خاتون میڈیا کے سامنے پیش ہوئیں جنھیں انعام سے نوازا گيا ہے۔ دو بچوں کی ماں 53 سالہ میوس ونسزیک نے اس لاٹری کا ٹکٹ میساچوسیٹ کے شہر چیکوپی کے ایک پیٹرول پمپ سٹیشن سے خریدا تھا۔ انھوں نے صحافیوں کو بتایا کہ جیتنے کے فوراً بعد انھوں نے ملازمت چھوڑ دی ہے۔ ان کی اس کامیاب لاٹری ٹکٹ کا نمبر 6، 7، 16، 23، 26، اور 4 تھا۔

امریکی تاریخ میں انعامی رقم کی مناسبت سے یہ اب تک کی سب سے بڑی لاٹری ہے۔ اس سے قبل گذشتہ برس جنوری میں جو سب سے بڑی لاٹری جیتی گئی تھی اس کی انعامی رقم تقریباً ایک ارب 60 کروڑ ڈالر کی تھی لیکن یہ رقم مشترکہ طور پر جیتنے والے تین افراد میں تقسیم کی گئی تھی۔میوس ونسزیک 

میساچوسیٹس سٹیٹ لاٹری نے میڈیا کو بتایا ہے کہ بدھ کی شب والے مذکورہ کامیاب ٹکٹ کی توثیق کر دی گئی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں محترمہ وانسزیک نے کہا: 'پہلی چیز تو یہ ہے کہ میں بس بیٹھ کر آرام کرنا چاہتی ہوں۔ میرا ایک طویل خواب تھا جو شرمندہ تعبیر ہوا۔' انھوں نے صحافیوں کو بتایا کہ انھوں نے اپنی لاٹری کے نمبر مختلف برتھ ڈے تاریخوں کی مناسبت سے خریدے تھے۔ وہ ایک میڈیکل سینٹر میں گذشتہ 32 برسوں سے کام کر رہی تھیں۔ انھوں نے کہا: 'میں نے انھیں فون کر کے بتا دیا ہے کہ اب میں کام پر واپس نہیں آؤں گی۔'

لوگ لاٹری خریدتے ہوئے

جب صحافیوں نے ان سے پوچھا کہ وہ اس دولت کا کیا کریں گی، کیا وہ کار جیسی مہنگی ترین اشیا پر صرف کریں گی تو اس کے جواب میں انھوں نے کہا کہ انھوں نے کچھ ماہ قبل ہی ایک اچھی کار خریدی تھی اور اب اس کی ضرورت نہیں ہے بلکہ اس کا قرضہ مکمل طور پر ادا کریں گی۔ اس لاٹری کی انعامی رقم میں سے 50 ہزار ڈالر لاٹری فروخت کرنے والے کو دیے جائیں گے۔ پیٹرول سٹیشن کے مالک باب بالبک کا کہنا ہے کہ یہ رقم خیراتی ادارے کو خیرات کی جائے گی۔

ٹیکس اور دیگر اخراجات نکالنے کے بعد جیتنے والے کو مجموعی طور پر 44 کروڑ 33 لاکھ ڈالر ملیں گے :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *