خیبرپختونخواہ میں ڈینگی کا علاج کرنے والی پنجاب کی ٹیم کے خلاف سخت ایکشن

Image result for kpk mobile dengue unit

پشاور: خیبرپختونخواہ حکومت نے پنجاب حکومت کی طرف سے ڈینگی کے مریضوں کا علاج کرنے والے ہیلتھ یونٹ کو کام کرنے سے منع کر دیا ہے- خیبرپختونخواہ میں ڈینگی کے مریضوں کی تعداد دو ہزار سے بھی بڑھ گئی ہے اور یہ تعداد مسلسل بڑھتی چلی جارہی ہے، ایسے میں پنجاب ہیلتھ یونٹ کی ٹیمیں مریضوں کا مفت علاج کر رہی تھیں لیکن خیبرپختونخواہ حکومت نے سیاسی مخالفت کی بنیاد پر پنجاب گورنمنٹ کے ڈاکٹروں کو فوری طور پر مریضوں کا علاج کرنے سے روک دیا ہے- آج خیبرپختونخواہ میں پنجاب حکومت کی ٹیمیں کسی بھی مریض کا علاج نہ کرسکیں- خیبرپختونخواہ کے عوام نے اس بات پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ کے پی کے حکومت نہ خود مریضوں پر توجہ دے رہی ہے نہ پنجاب حکومت کے ڈاکٹرز کو دینے دے رہی ہے- شدید غصے میں بھرے ایک شخص کا کہنا تھا کہ عمران خان خود تو بڑا کہتے ہیں کہ شوکت خانم ہسپتال کے خلاف بیان بازی کینسر کے مریضوں کے خلاف حملہ ہے حالانکہ اب وہ خود خیبرپختونخواہ میں ایسا ہی کر رہے ہیں، کیا ڈینگی کے مریضوں کا علاج پنجاب حکومت کے ڈاکٹرز کریں گے تو کوئی قیامت ٹوٹ پڑے گی؟

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *