برما پر ایک اعلی سطحی انٹرنل فون کال

hafiz yousuf siraj
ٹرن ۔۔ ٹرن ۔۔ ٹرن۔۔۔
ہیلو ۔۔ ہیلو
جی سر۔۔ آئی ایم سپیکنگ ۔۔
او کے ، اٹس یور چیف فرام ہیڈ کوارٹر۔۔
یس سر !
یہ برما کی جو تصاویر وائرل ہو رہی ہیں ، سوشل میڈیا پر ، پتہ کراؤ یہ فیک ہیں، یا رئیل۔۔؟
سر آئی آل ریڈی ڈن دس جاب!
کچھ پرانی ہیں، مگر باقی تازہ ایشو کی تصاویر ہیں۔ اگرچہ برما میں عالمی پریس کے داخلے پر پابندی ہے، لیکن اپنے ذرائع سے انھوں نے اس کی تصدیق کی ہے۔ اس بارے میں کچھ سٹوریز بھی چھپی ہیں عالمی میڈیا میں۔  ہم نے بھی اپنے ذرائع سے پتا چلایا ہے۔ کچھ لوگ وہاں زندہ دفن کر دیئے گئے، سو کلو میٹر کی پٹی کے سارے انسان کاٹ دئیے گئے۔۔۔ اور۔۔
انسان؟
جی سر اتفاقا یہ ہمارے ہم مذہب بھی تھے ، مسلمان!
Image result for ole telephone
اور سر! ہمیں سی آئی اے اور اپنے دوسرے دوستوں  کی معاونت سے معلوم ہوا ہےکہ یہ انتہائی ناکارہ اور غریب مسلمان تھے! مسلمانوں کے نام پر دھبہ ، جو اس خطے کے وارث ہونے کے باوجود لاوارث ہی ہیں۔
ہوں!
اچھا سنو! دھیان رکھو، وزیراعظم ہاؤس سے بھی اس پر تشویش ظاہر کی گئی ہے، وہ بھی اپنے طور پر روکیں گے، لیکن تم فیک تصاویر پھیلانے والوں کے خلاف سخت ایکشن لو۔ اس سے  عالمی سطح پر ہم مسلمانوں کا وقار مجروح ہوتا ہے۔ ہم جو تازہ علاقائی ڈیلز کر رہے ہیں، ان میں ہماری ساکھ متاثر ہو  سکتی ہے۔
جی سر !
اور ہاں ان تشددناک تصاویر کی زیادہ کوریج بھی روکو۔ ان سے دہشت پھیلتی ہے اور ہم دہشت گردی کے خلاف ہیں۔ تم نے دیکھا نہیں کہ کتنی وحشتناک تصاویر  بلڈی مسلم شئیر کر رہے ہیں کہ جنھیں ایک باوقار انسان دیکھ بھی نہیں سکتا۔
جی سر!
اوکےسر!
اور فون رکھ دیا گیا!

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *