جمہوریت جیت گئی ، اسٹیبلشمنٹ ہار گئی

عمران زاہد
imran zahid
اس دفعہ تو فیلڈ ایمپائر اور تھرڈ ایمپائر دونوں خان صاحب کے ساتھ ملے ہوئے تھے۔ ایسا چانس تو کم کم ہی کسی کو ملتا ہے۔ آپ کے مخالف امیدوار پر "سارا ٹبر چور" کا لیبل لگا دیا ہو ۔۔۔ امیدوار نااہل وزیرِ اعظم کی اہلیہ ہو اور ستم یہ کہ سابق امیدوار اور موجودہ امیدوار نہ صرف غیرحاضر ہوں بلکہ ان کی غیر حاضری کو حوالدار اینکرز "فرار" کے معانی پہنا رہے ہوں ۔۔۔ حمزہ شہباز اس ساری کمپین میں موجود نہ ہو، اور صرف مریم نوازشریف  اپنے اناڑی انداز سے کمپین چلا رہی ہو۔۔ اور سب سے بڑا ستم کہ الیکشن سے صرف دو دن پہلے عدلیہ میں نظرثانی کی پٹیشن بری طرح سے خارج ہو جائے ۔۔۔۔۔۔  علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے پورے صوبے سے بلائے گئے کارکن گھر گھر جا کر اپنا پیغام پہنچا رہے ہوں ۔۔۔۔ محترمہ یاسمین راشد انتھک محنت سے ایک ایک دروازہ کھٹکھٹا رہی ہوں ۔۔۔۔ عمران خان صاحب بقلم خود دو دفعہ کمپین کے لئے تشریف لائے ہوں ۔۔۔ سرور چوہدری، عبدالعلیم خان، اعجاز چوہدری اور دوسرے مشاہیر دامے درمے سخنے اس کمپین میں موجود ہوں ۔۔۔۔۔۔ روپوں کی بوریوں کے منہ کھلے ہوئے ہوں ۔۔۔  اس کے علاوہ غیر مرئی ہاتھوں کی مکمل سپورٹ بھی آپ کو میسر ہو ۔۔۔ اور اس کے باوجود بھی آپ ہار جائیں تو صبر کا کڑوا گھونٹ ہی پینا پڑتا ہے۔
Image result for ‫مریم نواز‬‎
نتائج کھلے دل سے تسلیم کرنے کے لئے کم از کم اتنا وقار ضرور دکھانا چاہیئے جتنا میاں نوازشریف نے پی ٹی آئی کے خیبر پختونخواہ میں حکومت بنانے کے حق پہ اسٹینڈ لے کر دکھایا تھا۔ حالانہ وہ الائینس کر کے وہاں باآسانی حکومت بنا سکتے تھے ۔۔۔ لیکن انہوں نے اکثریتی جماعت کو کھلے دل سے حکومت بنانے دی۔ اب خان صاحب کو بھی سپورٹس مین اسپرٹ کا مظاہرہ کرنا چاہیئے۔
آخری اطلاعات تک پیپلزپارٹی کے امیدوار کے ووٹ پچھلے الیکشن کے حاصل کردہ ووٹوں کے تقریباً برابر ہی ہیں ۔۔۔ یوں لگتا ہے کچھ سخت جان پیپلیوں کی آخری نسل اس حلقے میں موجود ہے جو اپنی آخری سانس تک پیپلز پارٹی کو ہی ووٹ دیں گے۔
ضیاء الدین انصاری صاحب اور ملٹری مسلم لیگ کے امیدوار کے حاصل کردہ ووٹوں کی تعداد معلوم نہیں ہے۔ حافظ شفیق الرحمٰن صاحب تو پچھلے دنوں فرما رہے تھے حلقے کی عوام ایک بپھرے ہوئے سمندر کی طرح ملی مسلم لیگ کو ووٹ ڈالے گی ۔۔۔ نہ جانے وہ سونامی آیا کہ نہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *