امریکی مسلم مبلغ پر خواتین سے ناجائز تعلقات رکھنے کا الزام

Nouman Ali Khan. PHOTO: FACEBOOK

مشہور پاکستانی نژاد امریکی مبلغ نعمان علی خان پر خواتین سے ناجائز تعلقات رکھنے کا الزام لگا دیا گیا۔ عمر ایم مظفر جو نعمان علی خان کے بیس سال سے دوست رہنے کا دعوی کرتے ہیں نے فیس بک پوسٹ پر کہا ہے  وہ خان کے کیس پر کافی عرصہ سے کام کر رہے ہیں اور خان اور ڈلاس سکالرز کے بیج صلح جوئی کی کوشش میں مصروف ہیں۔ انہوں نے لکھا کہ نعمان خان نے اسلامی تعلیمات کے خلاف خواتین سے ناجائز تعلقات کا اعتراف کیا ہے۔ انہوں نے ان تعلقات کو چھپانے کے لیے جھوٹ کا سہارا لیا اور بہت سے لوگوں کو دھمکی دی کہ کوئی ان کے خلاف زبان نہ کھولے ۔مظفر نے مزید بتایا کہ نعمان خان نے تمام عوامی خطابات سے دوری اختیار کرنے پر اتفاق کیا ہے اورخواتین سے تعلقات توڑنے کا وعدہ کیا تھا لیکن اب وہ اپنے وعدے سے پھر چکے ہیں اور اپنے وکیل کے ذریعے دھمکانے کا عمل شروع کر رکھا ہے۔ نعمان علی خان نے جواب میں کہا ہے کہ یہ انہیں بدنام کرنے کے لیے سازش رچائی گئی ہے۔ اس پر جواب میں مظفر نے کہا کہ نعمان کے خلاف کوئی سازش نہیں کی جا رہی ۔ سکالرز کمیونٹی کو نعمان کے جرائم سے بچانے کی کوشش میں ہیں۔ ڈائریکٹر مذہبی تعلیمات و سماجی خدمات نے بی مظفر کے بیانات کی توثیق کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نعمان کے خلاف الزامات کی جانچ پڑتا ل کی گئی ہے اور ابہت سے الزامات کا نعمان خان نے اعتراف بی کیا ہے۔الزامات کے عوام کے سامنے آنے کے ایک دن بعد نعمان علی خان نے فیس بک کے ذریعے تمام الزامات کو مسترد کیا۔ انہوں نے تمام الزمات کو بہتان قرار دیا اور کہا کہ یہ ان کی شہرت کو نقصان پہنچانے کی ایک چال ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرے اپنے کیمپس میں بہت سی طالبات موجود رہی ہیں جنہوں نے کبھی میرے خلاف اس طرح کے الزامات نہیں لگائے۔ نعمان خان دنیا کے 500 پر اثر مسلم شخصیات میں سے ہیں جنہوں نے بینہ فاونڈیشن کی بنیاد 2006 میں رکھی جس میں قرانی اور عربی تعلیمات دی جاتی ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *