لوڈ شیڈنگ اب نہیں ہو گی

حکومتی ذرائع کے مطابق اگلےelectricity مہینے سے لوڈ شیڈنگ کا مکمل طور پر خاتمہ کر دیا جائے گا۔بجلی کے صارفین جو اتنے سال سے لوڈ شیڈنگ جیسی اذیت سے دوچار اب سننے میں آیا ہے کہ جلد ہی اُن کو اس اذیت سے مکمل طور پر چھٹکارا ملنے والا ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ یہ حکومت کی انتھک کوششوں کی وجہ سے ممکن ہو پایا ہے جو پچھلے چار سال سے اس سلسلے میں زیادہ سے زیادہ اقدامات کرنے کے لئے کو شاں تھی۔ اس سلسلے میں ملک بھر میں نئے پاور پلانٹس لگائے گئے جن میں لیکویفائیڈ نیچرل گیس بیسڈ پلانٹس بھی شامل ہیں۔حکومتی ترجمان کا کہنا تھا پاکستاں میں نئے پاور پلانٹس بننے کے بعد سے پاکستان کی پجلی کی پیداوار میں نمایاں اضافہ ہو ہے اور اگلے مہینے سے پاکستان کے پاس اضافی بجلی موجود ہو گی۔
سال 2013میں دن کے بارہ گھنٹے بجلی غائب رہتی تھی لیکن سال2017تک یہ شاڑت فال کم ہو کے صرف تین سے چار گھنٹے کا رہ گیا تھاجبکہ ہمارے صنعتی سیکٹر کو بھی سال2016سے رمضان کے مہینے کو نکال کر بلا تعطل بجلی فراہم کی جارہی ہے۔حکومت نے بجلی بنانے کے ساتھ ساتھ بجلی کی سپلائی میں آنیوالے مسئلوں پر بھی اب قابو پا لیا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ اگلے مہینے سے لوڈ شیڈنگ مکمل ختم ہو جائے گی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *