مالی سال 18ء کے ابتدائی تین مہینوں میں بیرون ملک مقیم پاکستانی کارکنوں نے 4.8 ارب ڈالر کی ترسیلات بھیجیں

بیرون ملکremittence مقیم پاکستانی کارکنوں نے مالی سال 18ء  کے پہلےتین ماہ (جولائی تا ستمبر) میں4790.01 ملین امریکی ڈالر وطن بھجوائے جبکہ گذشتہ برس کی اسی مدت میں4740.37  ملین ڈالر موصول ہوئے تھے۔

ستمبر 2017ء کے دوران کارکنوں کی ترسیلات زر کی مالیت 1293.88  ملین ڈالر تھی جو کہ اگست 2017ء کے مقابلے میں 33.79  فیصد کم ہے، اور ستمبر 2016ء کے مقابلے میں 19.75 فیصد کم ہے۔ بلحاظ ملک ستمبر 2017ء کی تفصیلات سے پتہ چلتا ہے کہ سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، امریکہ، برطانیہ، خلیج تعاون کونسل کے ملکوں(بشمول بحرین، کویت، قطر اور عمان) اور یورپی یونین کے ملکوں سے بالترتیب308.05ملین ڈالر،  302.77 ملین ڈالر،171.9  ملین ڈالر،194.76  ملین ڈالر،141.02 ملین ڈالر، اور 45.07ملین ڈالر پاکستان بھجوائے گئے،جبکہ ستمبر 2016ء میں ان ملکوں سے آنے والی رقوم بالترتیب437.87ملین ڈالر،361.9 ملین ڈالر،211.14  ملین ڈالر، 210.22   ملین ڈالر،  182.18  ملین ڈالر اور43.60ملین ڈالر تھیں۔ ستمبر 2017ء کے دوران ناروے، سوئٹزر لینڈ، آسٹریلیا، کینیڈا، جاپان اور دیگر ملکوں سے آنے والی ترسیلات زر مجموعی طور  پر130.31  ملین ڈالر رہیں جبکہ  ستمبر  2016ء میں ان ملکوں سے165.45 ملین ڈالر موصول ہوئے تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *