پیدائش کا مہینہ شخصیت پر کس حد تک اثرانداز ہوتا ہے؟

علم نجوم کو تو سائنسastrology بکواس قرار دیتی ہے یعنی بروج کی پیشگوئیاں درحقیقت جھوٹ سے کم نہیں مگر سائنس دان یہ بھی مانتے ہیں کہ پیدائش کا موسم انسانی شخصیت پر اثر انداز ہوتا ہے۔

یعنی پیدائش کا دن تو شخصیت پر کوئی خاص اثرات مرتب کرتا ہے مگر موسم ضرور اس حوالے سے اہمیت رکھتا ہے۔

سائنسدانوں نے اس حوالے سے ایسے شواہد اکھٹا کرنے کی کوشش کی ہے تاکہ جان سکیں کہ پیدائش کا موسم کس حد تک انسان پر اثرانداز ہوتا ہے۔

حالیہ تحقیقی رپورٹس میں کالج میں زیرتعلیم طالبعلموں اور بالغ افراد کی شخصی عادات کا تجزیہ ان کے پیدائش کے موسم سے کیا گیا تاکہ جانا جاسکے کہ یہ عنصر کس حد تک اثرات مرتب کرتا ہے۔

ابھی اس حوالے سے نتائج ابتدائی یا نامکمل قرار دیئے جاسکتے ہیں تاہم کچھ حد تک صداقت بھی ہے۔

اس نتائج کے حوالے سے مختلف موسموں میں پیدا ہونے والے افراد کی ممکنہ شخصی عادات یا خاصیتیں کچھ ایسی ہوسکتی ہیں۔

موسم بہار

اگر تو آپ مارچ، اپریل یا مئی میں پیدا ہوئے ہیں، تو ان مہینوں کے بچے کافی جذباتی ہوتے ہیں جو کہ اچھا امر کہا جاسکتا ہے کیونکہ عام طور پر جذباتیت کو پرامیدی سے جوڑا جاتا ہے، مگر اس پرامیدی کی ایک قیمت بھی چکانی پڑسکتی ہے اور وہ ہے شدید ڈپریشن۔ 58 ہزار افراد سے زائد افراد پر 2012 میں ہونے والی طبی تحقیق میں یہ بات کی گئی تھی کہ بہار یا اپریل اور مئی میں پیدا ہونے والے افراد میں ڈپریشن کے عارضے کا امکان دیگر مہینوں میں پیدا ہونے والے افراد کے مقابلے میں بہت زیادہ ہوتا ہے۔

موسم گرما

جون، جولائی اور اگست میں پیدا ہونے والے افراد میں بھی کسی حد تک جذباتیت کا عنصر ہوتا ہے بلکہ بہار کے مقابلے میں پیدا ہونے والے مقابلے میں کچھ زیادہ ہوتا ہے اور ان کا مزاج اچانک بدلنے کا امکان ہوتا ہے، تاہم مجموعی طور پر ایسے افراد کافی خوشگوار مزاج کے حامل ہوتے ہیں۔

موسم خزاں

ستمبر، اکتوبر اور نومبر کے حوالے سے سائنسدانوں کے مطابق اس موسم میں پیدا ہونے والے میں صرف ڈپریشن کا خطرہ کم ہوتا ہے بلکہ بائی پولر ڈس آرڈر مرض کا خطرہ بھی بہت کم ہوتا ہے۔ تاہم ایک خامی ضرور ہوسکتی ہے وہ ہے جلد چڑنے کا رجحان۔

موسم سرما

دسمبر، جنوری اور فروری میں پیدا ہونے والے شیزوفرینیا بائی پولر ڈس آرڈر اور ڈپریشن جیسے امراض کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے مگر اس کے ساتھ ساتھ ان کے مزاج میں چڑچڑے پن کا امکان دیگر موسموں کے مقابلے بہت کم ہوتا ہے ، جبکہ سائنسدانوں کے مطابق دنیا میں شہرت حاصل کرنے کے لیے جنوری اور فروری کے مہینے میں پیدا ہونے والے افراد زیادہ کامیابی ہوتے ہیں کیونکہ ایسے افراد میں تخلیقی اور مسائل حل کرنے والی سوچ زیادہ بہتر ہوتی ہے۔

ویسے جیسا کہا جاچکا ہے کہ فی الحال یہ ابتدائی نتائج ہیں اور مکمل طور پر ان پر یقین نہیں کیا جاسکتا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *