بحریہ ٹاون:دو لڑکیاں جنسی غلامی گینگ سے آزاد کرا لی گئیں

پولیس نے بحریہ ٹاونsex trafficking اسلام آباد میں ایک گھر میں چھاپہ مار کر دو مغوی خواتین کو بازیاب کر لیا۔ لوئی بہر پولیس نے 7 افراد کو حراست میں لے لیا۔ بھاولپور کے ایک شہری نے پولیس کو اطلاع دی کہ اس کی بہن کو اس کے خاون نے 2 لاکھ میں فروخت کر دیا ہے۔ پولیس کو بتایا گیا کہ اس فروخت ہونے والی خاتون نے کسی طرح اپنے بھائی کو اطلاع کی کہ وہ بحریہ ٹاون اسلام آباد  فیز 4 میں مجرموں کی قید میں ہے۔ لوئی بہر پولیس نے گھر پر فوری طور پر چھاپہ مار کر دو قید خواتین کو گرفتار کر لیا۔ دونوں خواتین کو زنجیروں سے باندھ کر رکھا گیا تھا۔ خواتین کی بازیابی کے بعد پولیس نے 5 خواتین اور 2 مردوں کو حراست میں لے لیا  اور ڈیڑھ کلو ہشیش اور کچھ اسلحہ بھی برآمد کیا۔ ابتدائی تحقیقات کے بعد معلوم ہوا ہے کہ گرفتار کیے جانے والے ملزمان خواتین کو  سیکس ٹریفکنگ میں ملوث تھے  اور خواتین سیکس ورکرز تھیں۔ جن خواتین کو قید میں رکھا گیا تھا وہ اس کاروبار میں شرکت سے انکاری تھیں ۔ انکار کرنے والوں کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا جاتا تھا۔ پولیس کے مطابق کچھ نا معلوم  افراد امجد علی کے گھر میں گھسے اور قیمتی اشیا  اور زیورات لوٹ لیے۔ ایف 8 -1 میں محسن علی کے گھر بھی ڈاکہ پڑا ۔ محسن نے دعوی کیا ہے کہ ان کے گھر ڈاکہ میں ان کے گھریلو ملازمین کا ہاتھ ہو سکتا ہے ۔ آبپارہ مارکیٹ سے حمزہ طاہری کی 2016 ماڈل یونین موٹر سائیکل بھی چوری کر لی گئی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *