اسلام آباد دھرنا: پولیس کے ساتھ جھڑپ کے بعد 8 افراد گرفتار

اسلام آباد دھرنے میں شریک تحریک لبیک یارسول اللہ اور سنی تحریک کے کارکنان اور پولیس کے مابین معمولی جھڑپ کے بعد پولیس نے شرکا کے گرد گھیرا تنگ کرتے ہوئے فیض آباد انٹرچینج سے 8 افراد کو گرفتار کرلیا۔
پولیس اور ایف سی کی بھاری نفری آئی جی پی روڈ اور اسلام آباد ایکسپریس پر پہنچی تو دھرنے میں آپریشن کے اعلانات کرتے ہوئے تمام شرکا کو تیاری کی ہدایت کی گئی۔پولیس کا ایک دستہ جب فیض آباد اڈے کے قریب پہنچا تو دھرنے میں شریک ڈنڈا بردار چند افراد نے پولیس پر پتھر پھینکے جس کے نتیجے میں چند پولیس اہلکاروں کو ہاتھ اور بازو پر معمولی چوٹیں آئیں جس پر پولیس نے آگے بڑھ کر دھرنے کے شرکا کے 8 افراد کو گرفتار کرکے تھانہ آئی نائن منتقل کردیا۔
دوسری جانب دھرنے کے شرکا نے ممکنہ پولیس آپریشن سے بچنے کے لیے مخصوص گلاسز اور ماسک پہن لیے اور جوابی کاروائی کے لیے ڈنڈا بردار اور غلیل سے نشانہ بنانے کے لیے شرکا کو تیار رہنے کی ہدایت کردی گئی۔
خیال رہے کہ دھرنے میں شامل دونوں مذہبی جماعتوں کا حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ حال ہی میں ختم نبوت کے حوالے سے حلف نامے میں کی جانے والی تبدیلی کے ذمہ داروں کی نشاندہی کرتے ہوئے معطل کرے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *