مسجد نبویﷺ کے محراب نبوی میں امامت بحال کرنے کا فیصلہ !

9

مدینہ منورہ ۔ سعودی ذرائع کے مطابق 25 سال بعد ایک مرتبہ پھر 8 دسمبر 2017 کو نماز جمعہ محراب نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں ادا کرکے محراب نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کو مستقل امامت کے لیے بحال کردیا جائے گا۔ مسجد نبویﷺ میں اس وقت محراب عثمانی میں نمازوں کی امامت کروائی جارہی ہے۔محراب عثمانی مسجد نبویﷺ کا وہ محراب ہے جسے حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے حضرت عمر رضی اللہ عنہ کی شہادت کے بعد اپنے دور میں مسجد نبویﷺ کی توسیع کے دوران بنایا تھا۔جب کہ محراب نبویﷺ وہ محراب ہے جو خود نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے بنایا جہاں آپ صلی اللہ علیہ وسلم اپنے دور میں نمازیں پڑھایا کرتے تھے۔آپﷺ کے بعد حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ بھی اسی محراب میں امامت کرواتے رہے۔ 25 سال پہلے تک نمازوں کی امامت کے لیے محراب نبویﷺ ہی کو استعمال کیا جاتا تھا۔مگر زائرین کے بڑھتے ہوئے رش کے سبب نمازوں کی امامت کے لیے محراب عثمانی کو استعمال کیا جانے لگا۔محراب نبوی ﷺ میں آخری بار 1414 ہجری کو آخری نماز نماز وتر ادا کی گئی تھی:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *