عمران خان اور تیسری شادی

usman ghazi

خاور اور بشری مانیکا 30سال سے ازدواجی زندگی گزار رہے تھے کہ مرید بن کر عمران خان ان کی زندگی میں داخل ہوا

پورا گھرانہ عمران خان کا پیروکار تھا، دو بیٹے شوق سے تبدیلی کی پوسٹ شئیر کرتے، تین بیٹیاں کپتان کی ٹویٹس کو ری ٹویٹ کرتیں، ان کو کیا پتہ تھا کہ اک دن ان کا لیڈر ان کا باپ بن جائے گا

عمران خان نے مرید بننے کے تین ماہ کے اندر بشری مانیکا کو گھیرا، خاوند خاور مانیکا اس حقیقت سے بیخبر تھا کہ گھر میں نقب لگ چکی ہے، جب پتہ چلا تو 30 سالہ ازدواجی زندگی کے خاتمے کے ساتھ خلع کے پیپر اس کے ہاتھ میں تھے، وہ سب کچھ لٹا کر بھی آج عمران خان کے حق میں بیان جاری کررہا ہے تاکہ بیوی تو جاچکی، عزت کسی طرح بچ جائے

اس معاملے پہ بات کرنا ذاتی زندگی میں مداخلت قرار دیا گیا جبکہ اس معاملے پہ تحریک انصاف نے آفیشل پریس ریلیز جاری کرکے خود اسے پبلک ایشو بنایا جس کی چنداں ضرورت نہیں تھی، عمران خان کے ذاتی معاملے سے تحریک انصاف کا کوئی تعلق نہیں ہونا چاہئیے

شہباز شریف سول سروس افسران کی بیویوں کو گھیرتے رہے ہیں اور عمران خان نے کسٹم افسر کی بیوی کو گھیر لیا، 66 برس کی عمر میں اس جذباتی حماقت اور اخلاقی کرپشن کی کیا ضرورت تھی، کیا خاور مانیکا کا دوست بن کر اس کی بیوی کو ورغلانا ایک قومی سطح کے لیڈر کو زیب دیتا ہے، یہ سوال ہمیشہ اپنی جگہ موجود رہیں گے

تحریک انصاف سے ایک خاص طبقے نے بڑی امیدیں لگائی تھیں، جب بھی عمران خان انقلاب لینے نکلتے ہیں، کوئی عورت مل جاتی ہے اور یہ صورت حال انتہائی مضحکہ خیز ہوچکی ہے

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *