مقدس مقامات پر جنسی ہراسانی کے واقعات

 بشکریہ:بی بی سی اردو

مختلف ممالک کی مسلمان خواتین ہیش ٹیگ MosqueMeToos #کے ذریعے دوران حج اور دیگر مذہبی مناسک کی ادائیگی کے دوران اپنے ساتھ پیش آنے والے جنسی ہراسانی کے واقعات شیئر کر رہی ہیں۔ٹوئٹر پر اس کا آغاز مصری نژاد امریکی خاتون جرنلسٹ مونا ایلتھوے نے سنہ 2013 میں حج کے دوران جنسی طور پر ہراساں ہونے کے واقعے سے کیا۔مسلمان خواتین نے اس ہیش ٹیگ کا استعمال کیا اور 24 گھنٹوں سے بھی کم وقت میں اسے 2000 مرتبہ ٹوئٹس میں استعمال کیا گیا۔

ایک صارف کالی نے لکھا: 'میں نے بعض مردوں کی وجہ سے رمضان میں تراویح پڑھنا چھوڑ دیں۔ میں خاموش رہی کیوں کہ میں نے سوچا کوئی مجھ پر یقین نہیں کرے گا یا پھر کہا جائے گا کہ میرا دماغ کچھ زیادہ ہی تیز چلنے لگا ہے۔'

می ٹو کے اس نئے ہیش ٹیگ جو مسجد سے متعلق ہے کہ حامی کہتے ہیں کہ مقدس مقام پر جہاں عورت مکمل طور پر ڈھکی ہوئی ہوتی ہے اور عبادت کر رہی ہوتی ہے وہاں بھی اسے ہراساں کیا جاتا ہے اس پر حملہ کیا جاتا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *