کرینہ کپور کو آصفہ کے حق میں آواز اٹھانا مہنگا پڑ گیا

نئی دہلی ۔ مقبوضہ کشمیر میں 8 سالہ مسلمان بچی سے اجتماعی زیادتی اور بہیمانہ قتل کے واقعے کی دنیا بھر میں مذمت کی جارہی ہے اور بالی ووڈ سمیت دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد بھی اس کے خلاف آواز اٹھا رہے ہیں لیکن انتہاءپسند ہندوؤں نے ایسا کرنے پر اپنے ہی ملک کے فنکاروں کیخلاف زہر اگلنا شروع کر دیا ہے۔

بھارتیوں نے ثانیہ مرزا کو اس واقعے کیخلاف آواز اٹھانے پر پاکستانی کرکٹر شعیب ملک سے شادی کرنے اور بھارتی نہ ہونے کا طعنہ تو دیا ہی تھا لیکن اب کرینہ کپور کیخلاف بھی محاذ کھول لیا ہے اور انہیں ایک مسلمان سے شادی کرنے کے طعنے دئیے جا رہے ہیں۔

سوشل میڈیا پر کرینہ کی ایک تصویر وائرل ہوئی جس میں وہ مقبوضہ کشمیر کی بچی آصفہ کی حمایت میں ایک پلے کارڈ اٹھائے نظر آئی تھیں لیکن انتہاءپسند بھارتیوں کو یہ تصویر ایک آنکھ نہ بھائی جنہوں نے کرینہ کپور کو سیف علی خان کیساتھ شادی کرنے کے طعنے دینے شروع کر دی۔

View image on Twitter

ضرور پڑھیں:روس نے پاکستان کو ایسا جدید ترین ہتھیار دینے کا آغاز کردیا کہ دیکھ کر دشمنوں میں شدید خوف کی لہر دوڑ جائے گی

ہرش وردھن نامی ٹوئٹر صارف نے لکھا ”کرینہ کو اس بات پر شرم آنی چاہئے کہ ہندو ہونے کے باوجود انہوں نے ایک مسلمان سے شادی کی، ان دونوں کا ایک بچہ بھی ہے، جس کا نام ایک جابر مسلم بادشاہ کے نام پر تیمور رکھا گیا ہے۔“

Harshwardhan@W_harsh_

She should be ashmed of the fact that despite being a Hindu is married to a Muslim. Has a child with him and named him Taimur, after a brutal Islamic barbarian.

ہرش وردھن کی اس ٹوئٹ کا جواب، فلم ”ویرے دی ویڈنگ“ میں کرینہ کی ساتھی اداکارہ سوارا بھاسکر نے دیا اور لکھا کہ ” کرینہ کی بجائے آپ کو اس دنیا میں اپنی موجودگی پر شرم آنی چاہئے، خدا نے آپ کو دماغ دیا تھا، جسے آپ نے نفرت سے بھر دیا، جس کا اظہار آپ اپنے منہ کے ذریعے کرتے ہیں، آپ بھارت اور ہندوؤں کیلئے باعث شرم ہیں۔“

Swara Bhasker

@ReallySwara

You should be ashamed you exist. That God gave you a brain which you chose to fill with hate and a mouth you chose to spew filth from. You are a shame on India and Hindus. That shits like you feel emboldened to talk this crap publicly is this govt.’s legacy 🙏🏿 https://twitter.com/w_harsh_/status/985165214244057088 

آئی ایم شری نامی ایک صارف نے اخلاقیات کی تمام حدیں پار کرتے ہوئے کرینہ کپور کی تصویر کیساتھ مختصر لباس پہنے ان کی تصاویر بھی لگائیں اور شیئر کرتے ہوئے لکھا ”میں بھی شرمندہ ہوں“

ثمرجیت بھرت نے لکھا ”سلمان خان کے جرائم پر اس کا ساتھ دینے والے بالی ووڈ جوکرز اب یہ سکھا رہے ہیں کہ حق کیساتھ کیسے کھڑے ہونا ہے“

Samarjit Bharat@SamarjitBharat

Bollywood jokers who support Salman khan crimes are teaching others of how to take a right stand😂😂😂

کرن نے لکھا ”میں ایک عورت ہوں اور ریپ جیسے جرم کیخلاف بنے قوانین پر خوش نہیں ہوں۔ میری ایک بیٹی ہے اور میں اس کیلئے بہت پریشان ہوں۔ میں نے اسے کبھی اکیلے کسی پارک یا دکان پر نہیں جانے دیا۔ کرینہ کپور یہ صرف ایک کیس کی بات نہیں بلکہ یہ سب کی بات ہے۔ سخت قوانین خواتین کے خلاف جرائم میں کمی کو یقینی بنائیں گے“

Kiran@KiranShPa

I am a women. Not happy with law against Rape. I have a daughter for whome I am worried. I never let her alone to go visit park or any shop. it's not about just a case it is about all of it. Tough laws will ensure less crime against women.

جتندر جوشی نے لکھا ”میڈم جی، جموں میں جو ہمارے جوان شہید ہوتے ہیں، یا ان کے اوپر پتھر برسائے جاتے ہیں اس بارے میں بھی کبھی بول دیجئے، بھارت میں روز کسی نہ کسی بہن کا ریپ ہوتا ہے، تب آپ جیسی شخصیت کوئی کچھ نہیں کہتی۔۔۔ یہ زیادہ شرمناک ہے“

JITENDRA JOSHI@sharmile1989

Madam ji, kabhi kabaar Jammu me Jo Harare Jawaan shahid hote hai ya unke upar Patthar baji hoti hai is baare me bhi kabhi bol dijiye, Pure Bharat me roj kisi Na kisi behen pe rape hota hai,Tabb aap jaisa celebrity koi kuch nahi kehta hai, ye Jada shameful hai...

یاد رہے کہ رواں برس 17 جنوری کو مقبوضہ کشمیر کے علاقے کٹھوا میں ایک 8 سالہ بچی کو اجتماعی زیادتی کے بعد بہیمانہ انداز میں قتل کردیا گیا تھا۔ گزشتہ دنوں بھارتی عدالت میں پولیس کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ میں انکشاف ہوا تھا کہ بکروال کمیونٹی سے تعلق رکھنے والی مذکورہ بچی سے زیادتی اور قتل، اس مسلم کمیونٹی کو علاقے سے نکالنے کی ایک سازش اور سوچا سمجھا منصوبہ تھا :۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *