کیلے اور دودھ کا اکھٹا استعمال نقصان دہ یا فائدہ مند؟

لگ بھگ سب ہی ملک شیک کو پسند کرتے ہیں خصوصاً کیلے سے تیار کردہ یہ مشروب تو بہت زیادہ استعمال ہوتا ہے۔

ذائقے میں اچھا ہونے کے ساتھ یہ توانائی بھی فراہم کرتا ہے مگر کچھ حلقے اس امتزاج کو صحت کے لیے نقصان دہ قرار دیتے ہیں تو کیا واقعی یہ ٹھیک ہے؟

درحقیقت یہ موضوع بحث کا موضوع بنتا رہتا ہے مگر کیا کیلے اور دودھ کا امتزاج واقعی نقصان دہ ہے یا صحت کے لیے فائدہ مند ہے؟

تو اس کا جواب ہے کہ یہ مشروب واقعی فائدہ مند ہے کیونکہ اس میں موجود پروٹین اور کاربوہائیڈریٹس کا متوازن امتزاج ورزش کے بعد مسلز مضبوط بنانے میں مدد دیتا ہے۔

اسی طرح کیلے کے ملک شیک سے جسم کو پروٹین، فائبر، کیلشیئم، وٹامنز اور منرلز ملتے ہیں اور ہاں یہ جسمانی وزن نہیں بڑھاتا (اگر اعتدال میں رہ کر پیا جائے)۔

جیسا اوپر بتایا جاچکا ہے کہ پروٹین مسلز کی نشوونما میں مدد دیتے ہیں، وٹامنز اور منرلز میٹابولز کو بہتر کرنے کے ساتھ جسمانی افعال کو زیادہ موثر طریقے سے کام کرنے میں مدد دیتے ہیں۔

اسی طرح اس مشروب میں موجود فائبر پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرا رکھتا ہے جس سے بے وقت منہ چلانے کی روک تھام ہوتی ہے۔

دودھ پروٹین، وٹامنز، منرلز، کیلشیم اور وٹامن بی 1 سے بھرپور ہوتا ہے جبکہ سو گرام دودھ میں 42 کیلوریز ہوتی ہیں جبکہ کیلے وٹامن بی سکس، وٹامن سی، غذائی فائبر، پوٹاشیم اور بائیو ٹین سے بھرپور ہوتے ہیں۔

سو گرام کیلے میں 89 کیلوریز ہوتے ہیں مگر پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرا رکھتے ہیں جبکہ جسمانی توانائی بھی بڑھاتے ہیں۔

تاہم اگر کیلے کے ملک شیک کی زیادہ مقدار کو استعمال کیا جائے تو ہاضمہ خراب ہونے کا امکان ہوتا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *