کراچی: نارتھ ناظم آباد میں بیوٹی پارلر کے باہر سے دلہن لاپتہ، والدین کو اغواء کا شک

کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں بیوٹی پارلر کے باہر سے ایک دلہن پراسرار طور پر لاپتہ ہوگئی۔ لڑکی کے والدین کا الزام ہے کہ 4 ملزمان ان کی بیٹی کو اغوا کرکے لے گئے جبکہ پولیس کا موقف ہے کہ لڑکی اپنی مرضی سے سابق منگیتر کے ساتھ چلی گئی ہے۔

والدین کے مطابق لاپتہ ہونے والی قرۃ العین کی 30 ستمبر کو شادی تھی اور مایوں کی تیاری کے لیے وہ اپنی بہن کے ساتھ نارتھ ناظم آباد میں واقع ایک بیوٹی پارلر گئی تھی۔

اہل خانہ کا دعویٰ ہے کہ ان کی بیٹی کو پارلر کے باہر سے اُس کے سابق منگیتر علی نے اغوا کرلیا ہے جبکہ پولیس بھی مقدمہ درج کرنے سے گریزاں ہے۔

دوسری جانب ایس ایچ او تیموریہ چوہدری طفیل کے مطابق گمشدگی سے پہلے علی اور قرۃ العین کے درمیان فون پر رابطہ بھی ہوا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے پارلر انتظامیہ سے بھی پوچھ گچھ کی ہے، ساتھ ہی انہوں نے دعویٰ کیا کہ بہت جلد لڑکی کو بازیاب کرالیا جائے گا۔

عزیز و اقارب حیران ہیں کہ قرۃ العین نے گمشدگی سے پہلے علی سے فون پر کیا بات کی تھی اور اگر یہ اغوا کا کیس ہے تو پولیس مقدمہ درج کیوں نہیں کررہی؟

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *