شیڈول بینکوں سے لیے گئے حکومتی قرضوں میں 99 فیصد اضافہ

کراچی حکومت کی جانب سے شیڈول بینکوں سے لیے گئے قرضے 13 ستمبر کو اختتام پذیر ہونے والے ایک ہفتے کے دوران ہی 99 فیصد تک تجاوز کر گئے۔

مرکزی بینک کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق 6 ستمبر سے 13 ستمبر تک حکومت کا قرض 4 کھرب 43 ارب 50 کروڑ سے بڑھ کر 8 کھرب 99 ارب روپے تک جا پہنچا۔

یہ رقم یکم جولائی سے 6 ستمبر تک لیے گئے ( 4 کھرب 55 ارب 80 کروڑ روپے) قرض کے تقریباً مساوی ہے۔

اسٹیٹ بینک نے اپنے رپورٹ میں بتایا کہ حکومت نے مذکورہ ہفتے کے دوران شیڈول بینکوں سے لیے گئے قرضوں میں 4 کھرب 43 ارب 50 کروڑ روپے کا اضافہ کیا۔

قرض لینے میں تیزی کا آغاز جولائی کے وسط سے ہوا جب اسٹیٹ بینک نے اپنا مانیٹری سائیکل مکمل کر کے رعایتی شرح ایک فیصد بڑھادی تھی۔

خیال رہے کہ اس قبل تک حکومتی قرضوں کی نیلامی تقریباً ایک سے ڈیڑھ سال تک مایوسی کا شکار تھی۔

تاہم اس برس عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) معاہدے کے بعد سے قرض کی صورتحال گزشتہ سال کے مقابلے میں تبدیل ہوچکی ہے۔

چانچہ رواں مالی سال کے آغاز سے حکومت شیڈول بینکوں سے قرض حاصل کررہی ہے اور اسٹیٹ بینک پاکستان سے لیا گیا قرض ادا کررہی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے دوران حکومت نے شیڈول بینکوں کا 12 کھرب 38 ارب روپے کا قرض ادا کیا تھا جبکہ اس سال اب تک صرف مرکزی بینک کا 6 کھرب 25 ارب روپے کا قرض ہی ادا کیا گیا۔

دوسری جانب نجی شعبے کو 13 ستمبر تک ایک کھرب 15 ارب 70 کروڑ روپے ادا کیے گئے جو 6 ستمبر تک 86 ارب روپے تھے تاہم گزشتہ سال اسی عرصے کے دوران نجی شعبے نے 16 ارب 50 کروڑ روپے قرض لیا تھا۔

 

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *