پی آئی اے انتظامیہ پالپا سے تنازع کو خراب کرنا چاہتی ہے ، سینٹر طلحہ محمود

tlhaسینیٹر طلحہ محمود کا کہنا ہے کہ ایسا محسوس ہو رہا ہے کہ پی آئی اے انتظامیہ پالپا کے ساتھ ہونے والے تنازع کو حل کرنے کے بجائے خراب کرنا چاہتی ہے۔سینیٹ کی کمیٹی برائے کیبنٹ سیکرٹریٹ نے پی آئی اے اور پالپا کے درمیان جاری تنازع کو ختم کرنے کے لئے اجلاس طلب کر رکھا تھا لیکن چیئرمین پی آئی اے ناصر جعفر اجلاس میں شریک نہ ہوئے جس پر کمیٹی کے سربراہ سینیٹر طلحہ محمود نے برہمی کا اظہار کیا اور سیکرٹری ایوی ایشن محمد علی گردیزی سے چیرمین پی آئی اے کی غیر حاضری سے متعلق استفسار کیا تو انھوں نے جواب دیا کہ گھریلو مصروفیت کے باعث چیرمین پی آئی اے اجلاس میں شرکت نہیں کر سکے۔چیرمین پی آئی اے کی غفلت پر سینیٹ کمیٹی نے اجلاس کا واک آو¿ٹ کیا اور پالپا حکام نے بھی ان کا ساتھ دیا۔ سینیٹ کمیٹی نے کہا کہ اگر چیرمین پی آئی اے 15 منٹ میں پیش نہ ہوئے تو ان کے خلاف تحریک استحقاق لائیں گے۔ چیرمین پی آئی اے کی غیر حاضری کے باعث پالپا حکام بھی اجلاس سے اٹھ کر چلے گئے۔واضح رہے کہ 2 روز قبل سینیٹ کی کمیٹی برائے کیبنٹ سیکرٹریٹ نے پی آئی اے اور پالپا حکام کو معاملات کے حل کے لئے 2 روز کا وقت دیا تھا اور آج کے اجلاس میں دونوں کے درمیان طے پانے والے معاہدے پر دستخط ہونا تھے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *