آئی سی سی پر تنقید: سعید اجمل کو ڈسپلنری ایکشن کا سامنا

saeed ajmalانٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) کے باولنگ ایکشن کے طریقہ کار کا جائزہ لینے کے عمل کو تنقید کا نشانہ بنانے پر سعید اجمل کو کھیل کی عالمی گورننگ باڈی کے ڈسپلنری ایکشن کا سامنا ہے۔اجمل کے باو¿لنگ ایکشن کو ستمبر 2014 میں ٹیسٹ کے بعد غیرقانونی قرار دیا گیا تھا جہاں ان کا ایکشن مقررہ حد سے تجاوز کر رہا تھا اور اس کے بعد انہیں اپنے ایکشن کو ازسرنو ٹھیک کرنا پڑا۔رواں سال کے آغاز میں ان کے ایکشن کو درستی کی سند مل گئی لیکن اس کے بعد ان کی باو¿لنگ میں وہ سابقہ کاٹ برقرار نہ رہ سکی اور نتیجتاً وہ قومی ٹیم میں اپنی جگہ سے محروم ہو گئے۔اس باعث وہ انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں 2-0 کی جیت میں ٹیم کا حصہ نہیں تھے جہاں اس سے قبل 2012 میں انھوں نے 24 وکٹیں لے کر پاکستان کو اس وقت کی عالمی نمبر ایک ٹیم کے خلاف کلین سوئپ میں مرکزی کردار ادا کیا تھا۔اجمل نے آئی سی سی پر دہرا معیار اپنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ آف اسپنرز کو غیرمنصفانہ طریقے سے باو¿لنگ ایکشن پر نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *