زیرو بجلی خرچ کرنے والی اسمارٹ اسکرین تیار

آکسفورڈ یونیورسٹی میں قائم ایک کمپنی بوڈbatteryل ٹیکنالوجی نے ایک بالکل نئے مٹیریل سے اسکرین تیار کی ہے جو ڈسپلے دکھانے کے لیے زیرو بجلی استعمال کرتی ہے اور حیرت انگیز طورپر صارفین کو اسکرین پر سب کچھ دکھائی دے گا لیکن اس میں بیٹری خرچ نہیں ہوگی جب کہ کمپنی نے اسے ’ فیز چینج مٹیریل ‘ کا نام دیا ہے۔بوڈل ٹیکنالوجی کے سربراہ پیمان حسینی کا دعویٰ ہے کہ اسمارٹ فونز صارفین کو نئی ٹیکنالوجی سے روزانہ کے بجائے ایک ہفتے بعد موبائل فون چارج کرنے کی نوبت پیش آئے گی کیوں کہ اسمارٹ فون کی بیٹری کی انرجی کا ایک بھاری حصہ اسکرین لے لیتی ہے اور فیز چینج مٹیریل سے بنی اسکرین پر بیٹری کی انجری خرچ نہیں ہوگی۔ کمپنی پرامید ہے کہ نئے ڈسپلے مٹیریل سے اسمارٹ فون انڈسٹری میں انقلاب آسکتا ہے کیونکہ بیٹری خرچ ہونے کی رفتارکوانقلابی طورپردھیما کرنا ممکن ہوگا جب کہ ویئرایبل آلات مثلاً اسمارٹ گھڑیوں اور بینڈ کی زندگی بھی بڑھ سکتی ہے۔اسی کمپنی نے ایک اور ایجاد اسمارٹ ونڈوز کی صورت میں بھی پیش کی ہے جس میں کھڑکیوں پر ایسے شیشے لگانا ممکن ہوگا جو سورج کی انفراریڈ شعاع کو روک کرعمارتوں کو قدرتی طورپرٹھنڈا رکھ سکیں گی لیکن یہ کمپنی اپنی دونوں ایجادات کے بارے میں مزید تفصیلات فراہم نہیں کررہی۔ کمپنی کو حال ہی میں آکسفورڈ یونیورسٹی سے بڑے پیمانے پرفنڈزملے ہیں جس کے تحت اگلے 12 ماہ میں اسمارٹ ڈسپلے کا پہلا نمونہ تیار کر کے مارکیٹ میں پیش کیا جا سکے گا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *