چینی ٹائیکون نیویارک ٹائمز خریدنے کے خواہشمند

tyconضائع شدہ اشیاء کو پھر سے قابل استعمال بنانے والے ایک معروف چینی سرمایہ دارنے کہا ہے کہ وہ نیویارک ٹائمز کمپنی کو خریدنے کے لئے بات چیت کا آغاز کرنے والے تھے۔ چین گنگبیاؤ، چین کی ایک انتہائی معتبر شخصیت اور سماجی کارکن بھی ہیں۔ چین کہتے ہیں کہ وہ نیویارک ٹائمز کو خریدنے کے لئے بولی دینے میں بالکل سنجیدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ تقریباً دو برس سے اس بات پر غور کر رہے ہیں اور انہیں توقع ہے کہ وہ5جنوری کو اس موضوع پر بات کریں گے۔ اس روزان کی نیویارک ٹائمز کے ایک بڑے شیئر ہولڈر سے ملاقات ہونے والی ہے۔
چین کا کہنا تھا، ’’اگر آپ درست قیمت دیتے ہیں تو کوئی بھی ایسی چیز نہیں ہے کہ جسے آپ نہ خرید سکیں۔‘‘
دنیا کے انتہائی معتبر اخبارات میں سے ایک ہونے کے سبب، نیویارک ٹائمز اکثر دولت مندوں کا ہدف رہا ہے۔۔۔ تاہم ان میں سے کچھ کے ارادے بدل بھی جاتے ہیں۔پراپرٹی کی دنیا کے ایک بہت بڑا سرمایہ دار، ڈونلڈ ٹرمپ، جو ٹرمپ برینڈ کے مشروب کی بوتلیں فروخت کرتے ہیں، وہ بھی گزشتہ سال کے شروع میں نیویارک ٹائمز کو خریدنے کے لئے لاگت کا اندازہ لگاتے رہے ہیں۔ نیو یارک میگزین کی ایک رپورٹ کے مطابق، ٹرمپ کے منصوبوں میں ٹائمز کو خریدنے کے لئے جتنی رقم مختص کی گئی وہ ناکافی تھی۔اس بات کا کوئی امکان نظر نہیں آتا کہ نیویارک ٹائمز جوطویل عرصے سے اوچس سلزبرگر خاندان کے قبضے میں ہے،اب چین کو بیچ دیا جائے۔
نیویارک ٹائمز کی ایک ترجمان نے کہاکہ کمپنی افواہوں پرکوئی تبصرہ نہیں کرتی۔کمپنی کے چیئرمین، آرتھر سلزبرگر جونیر نے حال ہی میں کہا ہے کہ نیویارک ٹائمز’’ برائے فروخت‘‘ نہیں ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *