فیڈرل بورڈ آف ریونیو میں بے پیمانے پر مالی بے ضابطگیاں

fbrفیڈرل بورڈ آف ریونیو کی آڈٹ رپورٹ میں ادارے کے اندر دو ارب39کروڑ سے زائد کی مالی بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔ پبلک اکاونٹس کمیٹی نے ایف بی آر کو وصولی کے لیے دو ماہ کی مہلت دے دی۔
پبلک اکاونٹس کمیٹی کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس شاہدہ اختر کی زیر صدارت ہوا جس میں ایف بی آر کی آڈٹ رپورٹ پیش کی گئی۔ رپورٹ میں یہ بھی انکشاف ہوا کہ ایگزیکٹو پاورز کے غلط استعمال سے ادارے کو اڑسٹھ کروڑ چودہ لاکھ روپے کا نقصان ہوا جبکہ لاہور کے فارم کو خام مال کی درآمد میں کسٹم لیوی کی چھوٹ قواعد کی خلاف ورزی تھی۔
ایف بی آر کے ذمہ واجبات سے متعلق معاملات پبلک اکاونٹس کمیٹی نے ایف بی آر کی مانیٹرنگ اینڈ امپلی منٹیشن کمیٹی کو بھجوا دیے۔ چیئرمین ایف بی آر ناصر محمد خان نے کمیٹی کو بتایا کہ واجبات کی وصولی کے لیے کولیکٹر کو احکامات جاری کر دیے ہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *