روس کی اشتعال انگیزی، فٹبالرپیوٹن کی تصویروالی شرٹ کےساتھ

putin

یورپ میں فٹبال کی تنظیم یوئیفا نے روسی فٹبال کھلاڑی کو صدر پوتن کی تصویر والی بنیان دکھانے پر کھیل کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا ہے۔ ترکی کے شہر استنبول میں کھیلے جانے والے ایک میچ کے بعد ایک روسی فٹبالر دمتری تاراسوف نے اپنی قمیض اُتار کر نیچے زیبِ تن صدر پوتن کی تصویر والی بنیان دِکھا کر ترک شائقین کو اشتعال دلایا تھا۔ لوکوموتو ماسکو کے مِڈ فیلڈر دمتری تاراسوف کے بنیان پر روسی صدر پوتن کی نیوی کی ٹوپی والی تصویر بنی ہوئی تھی، اور اُس کے ساتھ ’سب سے مہذب صدر‘ بھی تحریر تھا۔ لكمٹيو ماسکو نے دیمتری تاراسوف کے اس سلوک کو غیر ضروری قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے۔ یورپی فٹ بال ریگولیٹری ادارے يوئیفا 17 مارچ کو اس معاملے کی سماعت کرے گی اور ممکنہ طور پر دمتری تاراسوف کو پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے کیونکہ قوانین کے مطابق کھلاڑیوں کو میچ کے دوران کسی بھی طرح کے سیاسی بیان یا کسی سیاسی نظریات سے وابستگی نہیں دکھانی چاہیے۔ سیاست سے بھر پور یوروپا لیگ کا یہ مقابلہ نومبر میں ترکی کی جانب سے روسی طیارے کو مار گرانے کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان سب سے بڑا مقابلہ تھا۔ترکی کی ٹیم فینیرباچے نے یہ مقابلہ دو صفر سے جیت لیا تھا۔ تاراسوف نے اپنے عمل کا دفاع کیا تھا۔ اُنھوں نے روس کے خبر رساں ادارے آر سپورٹ سے گفتگو میں کہا کہ ’یہ میرے صدر ہیں۔ میں اُن کی عزت کرتا ہوں اور میں نے فیصلہ کیا کہ میں دکھاؤں کہ میں ہمیشہ اُن کے ساتھ ہوں اور اُن کی حمایت کے لیے تیار ہوں۔‘ ’قمیض پر ہر وہ بات تحریر تھی جو میں کہنا چاہتا ہوں۔‘ ترکی کے اخبار ینی شفق نے اِس حرکت کو ’پوتن کی اشتعال انگیزی‘ قرار دیا تھا۔ واضح رہے کہ ترکی کی جانب سے روسی طیارے کو سرحدی خلاف ورزی کا دعویٰ کرتے ہوئے مار گرانے کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کشیدہ ہیں :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *