DO OR DIE

تخت یا تختہ ۔۔ایسا لمحہ ہر انسان کی زندگی میں ایک آدھ بار آہی جاتا ہے۔لیکن خان صاحب کی زندگی میں یہ لمحہ گزشتہ چند برسوں میں ایک سے زائد بار آچکا ہے۔ جہاں مارو یا مر جاو کی کیفیت آجائے۔ ایسا ان لوگوں کی زندگی میں زیادہ ہوتا ہے…

شہر آسیب میں آنکھیں ہی نہیں ہیں کافی!

پاکستانی عدلیہ پر قلم یا آواز اٹھانا ممنوع ہے کیونکہ اس سے عدلیہ کے تقدس کی پامالی کا ڈر ہوتا ہے۔ عدالت میں کوئی کیس چل رہا ہو تو اس پر بات نہیں کی جا سکتی۔ اور کسی جج کے کردار پر انگلی اٹھ جائے تو آپ بلاسفیمی کے قصوروار…

خواجہ سرا کا ریپ ، دفعہ کون سی لگائی جائے؟

آج ایک اہم سوال اٹھ کھڑا ہوا ہے کہ تیسری جنس سے متعلقہ مقدمات کو کس پلڑے میں رکھا جائے گا؟ ان پر مردوں کے قوانین لاگو ہوں گے یا عورتوں کے؟ پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی خواجہ سرا کے ریپ کے خلاف ایف آئی آر کاٹی گئی…

ایک ستارے کے لئے ستارہ امتیاز

میں نے یہ خبر سنی کہ تارڑ صاحب کو اعلی ترین اعزاز ستارہ امتیاز سے نوازا گیا ہے تو فورا ان کو مبارکباد کا پیغام واٹس ایپ کیا یہ سوچے بنا کہ برسوں ہو گئے ان سے ملاقات ہوئے نہ جانے وہ جواب دیں گے یا نہیں۔ تھوڑی دیر کے…

خدارا! ہم غدار ہرگز نہیں۔۔۔

میر تقی میر کا مشہور شعر ہے ۔۔۔نازکی اس کے لب کی کیا کہیے ۔۔۔ پنکھڑی اک گلاب کی سی ہے اس شعر میں ( اس ) سے مراد میرتقی میر کا محبوب ہے۔ میر نے اپنے محبوب کے ہونٹوں کو گلاب سے تشبیہ دی ہے۔ لیکن ہم نے یہ…