پنجاب میں رینجرز کی آمد!

گزشتہ دو دہائیوں میں پاکستان میں کم و بیش ستر ہزار سے زیادہ افراد خاک و خون کا حصہ بن چکے ہیں، اس جنگ کے دوران ملک کو پہنچنے والا معاشی اور معاشرتی نقصان اس کے علاوہ بھی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ ناقابل تلافی بھی ہے، لیکن اس…

اسلامی ورثے کی حفاظت!

کتابت کا فن اپنے آغاز سے اب تک بہت سے دور دیکھ چکا ہے، لیکن گزشتہ تین دہائیوں میں بالخصوص جب کتابت عام قلم سے کمپیوٹر میں منتقل ہوئی تو شروع میں کسی کو گمان بھی نہیں تھا کہ قلم کا جادو کبھی ختم بھی ہوسکتا ہے۔ اُس وقت کتابیں…

لاہور سے اگلا پڑاؤ!

اگرکوئی پوچھے کہ جنوبی ایشیا کیا ہے؟ تو سادہ سے الفاظ میں یہی کہا جاسکتا ہے کہ جنوبی ایشیا اپنے وسائل کے اعتبار اور محل وقوع کے لحاظ سے دنیا کے ماتھے کا جھومر ہے۔ اس میں کوئی شبہہ نہیں کہ جنوبی ایشیا کا شمار دنیا کے گنجان آباد ترین…

بھارت دماغ کے دروازے کھولے!

ایک جانب مشرق سے سی پیک کی صورت میں ایک نیا سورج اُبھر کر مغرب تک کی آنکھیں چندھیارہا ہے اور دوسری جانب پاکستان کے مغرب میں پڑوسی ملک افغانستان ابھی تک آنکھوں پر تعصب کی پٹی باندھ کر بیٹھا ہے۔ تعصب کی اس پٹی کی وجہ سے افغان حکومت…

یہ سی پیک کی صدی ہے!

2017شروع ہونے کے بعد جنوری ہی ختم نہیں ہوا بلکہ ایک دوسرے مہینے کا پہلا ہفتہ بھی گزر چکا ہے اور آج آٹھویں دن کا یہ روشن سورج بھی شام کو افق کے پار غائب ہوجائے گا۔ بہار سر پر آن پہنچی ہے اور باغوں میں پھول مہکنے کا موسم…

سات ارب انسانوں کی خواہش کا احترام!

اس میں کوئی شبہ نہیں کہ دنیا میں اس وقت جتنے بھی جوہری ہتھیار موجود ہیں، اُن کی تعداد کو دیکھا جائے دنیا ہر وقت جنگ کے دھانے پر کھڑی نظر آتی ہے ۔ حیران کن طور پر سب سے زیادہ جوہری ہتھیار بھی اُن ممالک کے پاس ہیں، جنہیں…

تحریک انصاف کا کٹہرا!

زمینوں کا فاصلہ جتنا کم بھی ہو تو بہت زیادہ زیادہ لگتا ہے، لیکن اس کے برعکس زمانوں کا فاصلہ جتنا مرضی زیادہ ہو تو پھر بھی انتہائی کم لگتا ہے۔پاکستان میں اوسط عمر جینے والا شخص بھی ایک لمحے کو پیچھے مڑکر دیکھتا ہے تو صدیوں کے قصے کل…

پاناما کا کھدو اور اصل مسائل!

کبھی کبھی تو ایسے لگتا ہے کہ جیسے کہ خیبر پختونخوا پر کسی آسیب کا سایہ ہے کہ گزشتہ چار دہائیوں سے بالعموم اور گزشتہ دو دہائیوں سے بالخصوص اس صوبے کے لوگ جس کرب سے گزر رہے ہیں، وہ کوئی دوسرا نہیں بلکہ صرف اہل خیبر پختونخوا ہی جانتے…

انصاف کا ڈھکوسلا

تاریخ میں ہمیں ایسی کوئی مثال نہیں ملتی کہ کسی قوم نے انصاف کے ماحول کے بغیر ترقی کی ہو۔ یہ حقیقت ہے کہ معاشرے ظلم کے ماحول میں پرورش نہیں پاتے بلکہ جیسے جیسے انصاف پر برگ و بار آنے لگتے ہیں تو معاشروں میں بھی نمو کی نئی…

سیکھنے کا لمحہ کب آئے گا؟

اس میں تو یقینا کوئی شبہ نہیں ہے کہ پاکستان میں اب تک چارمرتبہ فوج براہ راست اقتدار میں آچکی ہے۔ اِن میں جنرل ایوب خان1958ء میں اقتدار میں آئے اور دس سال تک ملک کے سیاہ و سفید کا مالک بنے بیٹھے رہے۔ ایوب خان کے دور میں ملک…