ابھی مسلم لیگ کے اندر ’’بہت ہو گیا‘‘ کہنے کو کوئی تیار نہیں

پانامہ کا قضیہ کئی روز سے اس ملک کی اعلیٰ ترین عدالت کے روبرو ہے۔اُمید کی جارہی ہے کہ جمعرات کے دن فریقین کے وکلاء اپنے دلائل مکمل کرلیں گے۔ شاید اس کے بعد عزت مآب ججوں کو متفقہ طورپر کوئی فیصلہ لکھنے کے لئے کچھ وقت درکارہوگا۔ وہ کتنے…

یادداشتیں

ڈاکٹر فرید احمد پراچہ کے تازہ سفر نامے‘‘ہوائوں کے سنگ‘‘ کی تقریب رونمائی میں‘ سہیل وڑائچ نے ایک اہم نکتے کی طرف توجہ دلائی‘ اہلِ سیاست کو کتابیں پڑھنی بھی چاہئیں اور لکھنی بھی۔ مغرب میں اہلِ سیاست کا معاملہ یہی ہے‘ وہاں اہلِ صحافت بھی اس کارِ خیر میں…

استاد خارش لدھیانوی

استاد خارش لدھیانوی بہت بلند پایہ شاعر، ادیب اور دانشور ہیں مگر پی آر نہ ہونے کی وجہ سے انہیں میرے علاوہ کوئی نہیں جانتا۔ استاد نے اپنا تخلص خارش رکھا ہوا ہے جسے پنجابی میں ’’کھرک‘‘ کہتے ہیں اور یہ تخلص انہوں نے بلاوجہ نہیں رکھا کیونکہ انہیں اکثر…

میں اعتراف کرتا ہوں

میں اُن لوگوں کو بہت حسرت سے دیکھتا ہوں جو روزانہ جِم جاتے ہیں، باقاعدگی سے ورزش کرتے ہیں، یوگا کی کلاسیں لیتے ہیں، روزانہ نصف درجن کتابوں کا مطالعہ کرتے ہیں، بڑوں کا ادب کرتے ہیں، بچو ں سے شفقت سے پیش آتے ہیں، عورتوں کا احترام کرتے ہیں،…

سیدھا سا جواب

پہلے تو مجھے یقین ہی نہیں آیا...لیکن جب دلاور صاحب نے خدا کی قسم اٹھائی تو میں بھی شش و پنج میں پڑ گیا۔ سمجھ نہیں آرہی تھی کہ اُن کی یہ انہونی سی بات کیسے مان لوں۔ وہ بضد تھے کہ اُن کی بات بالکل درست ہے۔ ہوا یوں…

اقتدار کے کھیل سے جڑی ڈرامائی کہانی کا آغاز

علامہ حافظ ڈاکٹر طاہر القادری کی طرح میں بھی ”مبارک ہو- مبارک ہو“ پکار اُٹھنے پر مجبور ہو گیا ہوں۔ ہوا یہ ہے کہ اپنے دو رپورٹروں کی تفصیلی تحقیق کے بعد ”نیویارک ٹائمز“ اپنے صفحہ¿ اوّل پر شائع کئے مضمون کے ذریعے یہ بات تسلیم کرنے پر مجبور ہو…

پنجاب میں رینجرز کی آمد!

گزشتہ دو دہائیوں میں پاکستان میں کم و بیش ستر ہزار سے زیادہ افراد خاک و خون کا حصہ بن چکے ہیں، اس جنگ کے دوران ملک کو پہنچنے والا معاشی اور معاشرتی نقصان اس کے علاوہ بھی ہے اور اس کے ساتھ ساتھ ناقابل تلافی بھی ہے، لیکن اس…

سرمایے کا کھیل

سرمایہ آج بھی صورت گرِ حیات ہے۔طرفہ تماشا یہ ہے کہ سرمایے کے خلاف اٹھنے والی آوازیں بھی اسی سرمایے کی مرہونِ منت ہیں۔ سرمایہ دارانہ نظام کا کمال یہ ہے کہ اس نے اپنے ناقدین کو بھی اپنے آغوش میں لے رکھا ہے اوران کے نان نفقے کا اہتما…

کیا اب اونٹ کو خیمے سے نکالا جا سکے گا؟

تھائی لینڈ ملائشیا کے شمال میں واقع ہے۔ سمگلنگ دونوں ملکوں کے لیے مسئلہ بنا ہوا تھا۔ 1970ء کے عشرے میں دونوں ملکوں نے اپنی اپنی سرحد پر دیواریں تعمیر کر دیں‘ یہ دیواریں کنکریٹ اور لوہے سے بنائی گئیں ‘اوپر خار دار تار لگائی گئی۔ کہیں کہیں لوہے کی…

عسکری قیادت‘ یہ پیش نظر رکھے…

جس چیز کا جنرل صاحب کو احساس ہونا چاہیے وہ یہ ہے کہ ضرب ِ عضب میں فوج کی ایئرفورس کے موثر تعاون سے حاصل کی گئی کامیابیوں کا سہرا صرف اور صرف مسلح افواج کے سر ہے ۔ اس میں بدقسمتی سے سویلینزحکومتوں کا کوئی کردار نہیں۔ یہ ایک…