استاد کے بغیر 

ایک خاتون نے انگریزی پڑھی - ان کے والد مولوی تھے - ان کے گھر پر انگریزی کا ماحول نہ تھا -  چنانچہ ایم اے( انگلش…

فطرت کے پجاری

مسافر کو پہنچنا تو تحمل نگر تھا مگر راستہ بھول کر گھومتا پھرتا ایک ایسی بستی میں پہنچ گیا کہ ماحول جہاں کا دنیا جہان سے…

دو آنے 

(معروف سرائیکی ادیب پروفیسر حبیب موہانا کے سرائیکی افسانہ کا ترجمہ، عنایت عادل کے قلم سے) بگا ابھی پہلی جماعت میں تھا،وہ گرم مفلر میں لپٹا…

ادھوری نیند (افسانہ)

حبیب موہانا ہر سال گرمیوں کی چھٹیاں میں کرم ایجنسی میں گزارتا تھا۔ایک دفعہ میں پارا چنار میں تھا کہ مجھے تحصیل داری کے امتحان کا…