مریخ پر 6کر وڑ سال قبل ڈائنو سار جیسی مخلوق کی حکمرانی تھی

dinosaurسیاروں پر ڈائنوسار جیسی مخلوق کی موجودگی ہمیشہ سے ہی سائنسدانوں کے لئے دلچسپی کا باعث رہی ہے اور اس پر بھر پور تحقیق اب بھی جاری ہے جب کہ مریخ پر ملنے والی تھائی بون نے ایک بار پھر سائنسدانوں کے اس شک کو یقین میں بدل دیا ہے کہ اس سرخ سیارے پر کبھی ڈائنو سارجیسے جانوروں کی حکمرانی تھی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ہڈی کسی ڈائنوسا ر جیسے بڑے جانور کی ہوسکتی ہے اور اس سے اس خیال کو بھی تقویت ملتی ہے کہ مریخ پرزندگی موجود رہی ہے ۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ 6 کروڑ سال قبل یہاں ڈائنوسار جیسے بڑے جانور موجود تھے اور وقت کے ساتھ ساتھ زندگی اس سیارے پر معدوم ہوتی چلی گئی تاہم اب بھی یہاں زندگی کے آثار موجود ہیں۔مریخ پر ڈائنوسار کی باقیات کا ملنا نئی بات نہیں اس سے قبل بھی ایسے شواہد ملتے رہے ہیں جن سے وہاں زندگی کی موجودگی کا پتہ چلتا ہے ، سائنسدانوں نے خیال ظاہر کیا ہے کہ مریخ پر زندگی انہی بڑے جانوروں کے گرد گھومتی تھی۔ اس کے علاوہ گرد کے طوفان اور شہاب ثاقب کے اثرات اس بات کا پتہ دیتے ہیں کہ تھائی بون جیسے آثار ملتے رہیں گے ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *