شوہر نے سابقہ بیوی کا نمبر ریسٹورنٹ باتھ روم پر لکھ دیا، اس کے بعد ایسا کیا ہوا کہ انٹرنیٹ پر دھوم مچ گئی!

آکلینڈ  -ہمارے ہاں عوامی مقامات پر بنے واش رومز میں یہ منظر عام دیکھنے کو ملتا ہے کہ دیواروں پر غلیظ باتوں کے علاوہ فون نمبر بھی درج ہوتے ہیں، اور یہ شرمناک کام یقینا گھٹیا ذہنیت کے مالک لوگ ہی کرتے ہیں۔ نیوزی لینڈ میں بھی ایک ایسے ہی گھٹیا شخص نے اپنی سابقہ بیوی کا فون نمبر ایک شراب خانے کے واش روم کی دیوار پر لکھ دیا اور ساتھ یہ الفاظ بھی لکھے ” اگر آپ ایک فاحشہ کے ساتھ بے حیائی چاہتے ہیں تو اس نمبر پر کال کریں۔“  واش روم استعمال کرنے والے ایک ٹرک درائیور مارک ایلس نے یہ نمبر اور اس کے ساتھ لکھا پیغام دیکھا تو محض تجسس کے مارے ایک میسج بھیج دیا ، لیکن کون جانتا تھا کہ یہ میسج ایک ایسی لو سٹوری کا آغاز ثابت ہو گا کہ جو انٹرنیٹ پر دھوم مچا دے گی۔ ویب سائٹ این زی ہیرلڈ کے مطابق واش روم کی دیوار پر لکھا فون نمبر لیگل سیکرٹری ڈونا رابرٹس کا تھا ، جن کے سابقہ شوہر نے اپنی گندی ذہنیت کا مظاہر ہ کرتے ہوئے ان کا فون نمبر عام کر کے ان کی زندگی اجیرن کرنے کی کوشش کی تھی۔

مارک ایلس نے ڈونا رابرٹس کو بھیجے گئے پہلے میسج میں لکھا ”ہیلو ، کیا ہو رہا ہے ؟“ ڈونا رابرٹس کہتی ہیں کہ وہ یہ میسج ملنے پر حیران ہوئیں کہ کوئی اجنبی اتنی بے تکلفی کے ساتھ ان سے حال احوال کیوں پوچھ رہا ہے، تاہم انہوں نے میسج بھیجنے والے کے متعلق جاننے کیلئے ایک جوابی میسج بھیج دیا۔ اتفاق کی بات ہے کہ مارک ایلس خاصے مہذب اور نفیس آدمی ثابت ہوئے اور دونوں کے درمیان تجسس سے شروع ہونیوالے سوالات و جوابات ایک شائستہ اور دلچسپ گفتگو کی صورت اختیار کر گئے۔ کچھ دن تک ان کے درمیان میسجز کا تبادلہ ہو تا رہا اور پھر انہوں نے ملنے کا فیصلہ کر لیا۔ ڈونا اور مارک کا کہنا ہے کہ پہلی ملاقات میں ہی انہیں اندازہ ہو گیا کہ وہ ایک دوسرے کو پسند کرتے ہیں اور اچھے ہمسفر ثابت ہو سکتے ہیں۔ ڈونا کے سابقہ شوہر کی گندی حرکت کے محض چند ہفتے بعد ہی یہ جوڑا شادی کا فیصلہ کر چکا تھا۔  ڈونا کا کہنا ہے کہ اگرچہ ان کے سابقہ شوہر نے ان کے حق میں برا سوچا لیکن قسمت کو کچھ اور ہی منظور تھا اور انھیں زندگی بھر کیلئے ایک ایسا ہمسفر مل گیا کہ جو ان سے شدید محبت کرتا ہے اور ہر ممکن طور پرانہیں خوش رکھنے کی کوشش کرتا ہے۔ ڈونا اور مارک اب دو بچوں کے والدین ہیں اور ایک مطمئن اور پر مسرت زندگی گزار رہے ہیں :-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *