گلوبل وارمنگ: کافی کی فصل پر فنگس کے حملے میں کئی گنا اضافہ

COFFEE-master675 پیرو کے علاقے کجامراکامیں کافی کے کاشتکار ٹیوڈومیرو میلنڈریس اوجیڈا ان دنوں ایک دوراہے پر کھڑے ہیں۔ انہیں اب کسی راستے میں کوئی دلچسپی نہیں رہی۔
اسپینی زبان میں رویا کہلانے والی پتا مروڑ فنگس، ان کی فصل کے تین چوتھائی کو تباہ کر چکی ہے۔میلنڈریس اس فنگس کو مارنے کیلئے کیمکلز بھی استعمال کر سکتے ہیں، اگرچہ ایسا کرنے سے ان کا فصلوں کی کاشت کا لائسنس داؤ پر لگ جائے گا اور ان کی پیداواری لاگت میں بھی 10 فیصد کا اضافہ ہو جائے گامگر دوسری صورت یہ ہے کہ وہ اپنے سرٹفکیٹ کولے کر بیٹھے رہیں اور اپنی آنکھوں کے سامنے اپنے کافی کے پودوں کو مرتا ہوا دیکھتے رہیں۔
میلنڈریس نے کہا کہ’’ہم ، کافی اگانے والے آگے پہاڑ اور پیچھے سمندر کے بیچ پھنس کر رہ گئے ہیں۔‘‘
گلوبل وارمنگ فنگس کی گہری دوست ہے۔ اس کے نتیجے میں نہایت نامہربان فنگس بہت تیزی سے پروان چڑھنے کے قابل ہو جاتی ہے۔ گزشتہ 30برس کے دوران، فنگس کا سب سے بڑا حملہ جس نے تمام پیداوار کو تباہ کر دیا تھا، کاشتکاروں کی آمدنیاں کم کر دی تھیں اورکسانوں کو پیرو سے میکسکو جانے پر مجبور کر دیا تھا۔کافی اگانے والوں کو اس وقت اضافی نقصان کا سامنا کرنا پڑیتا ہے جب وہ اپنے روزگار کے اس ذریعے کو بچانے کیلئے کیمیائی محلول استعمال کرنے سے بھی روک دئیے جاتے ہیں۔
پتا مروڑ سارے لاطینی امریکہ میں نہایت عروج پر ہے۔ مثلاًگوئٹے مالا میں، پہلے فنگس سطح سمندر سے محض 3000فٹ کی بلندی تک پیدا ہوتی تھی۔ مگر اب یہ 6000فٹ کی بلندی پر بھی پیدا ہونے لگی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *