خواجہ سرا نے انقلابی قدم اٹھا دیا

عرفان الحق

کامی سڈ ایک خواجہ سرا ایکٹوسٹ ہیں جو پاکستان بھر میں خواجہ سرا کمیونٹی کے حقوق کے لیے برسر پیکار ہیں۔ ملک کے اس مشہور خواجہ سرا ایکٹوسٹ نے فیشن کی دنیا میں قدم رکھ کر پہلا خواجہ سرا ماڈ ل بننے کا اعزاز حاصل کر لیا ہے۔ وقار جے خان کی بنائی ایک تصویر میں کامی بہت پر اعتماد نظر آرہے ہیں۔ اپنا تجربہ بیان کرتے ہوئے کامی نے کہا: جب وقار نے جو میرے دوست بھی ہیں، مجھ سے شوٹنگ کے لیے رابطہ کیا تو میں بہت حیران رہ گئی، اور مجھے یقین نہیں تھا کہ میں یہ کیسے کر پاوں گی۔ مجھے لگا کہ اس پلیٹ فارم کے ذریعے میں اپنے ٹیلنٹ کا صحیح اندازہ کر سکوں گی اور ساتھ ساتھ اپنی کمیونٹی کو مین سٹریم سوسائٹی میں وقار کے ساتھ نمائندگی کر سکوں گی۔اگر مجھے مزید مواقع ملے تو مختاراں مائی کی طرح میں بھی ان مواقع سے فائد ہ اٹھاوں گی۔ ایک لمبے عرصے سے ہماری خواجہ سرا کمیونٹی معاشرے سے پیچھے دھکے کھا رہی ہے۔ اب ہمیں آگے بڑھ کر لوگوں کو اپنی صلاحیتوں کا معترف بنانا ہو گا جس سے ہمیں ایک پہچان مل سکے۔

Isn't she a natural?

اس مہم کے ذریعے خواجہ سرا کمیونٹی کو معاشرے کے اہم حصے کے طور پر متعارف کروانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اگرچہ کامی کا کہنا ہے کہ ان کا خاندان انہیں انٹرٹینمنٹ انڈسٹری میں بھیجنے پر مکمل راضی نہیں تھے لیکن پھر بھی انہوں نے اسے اہم قدم سمجھتے ہوئے قبول کر لیا۔ انہوں نے کہا: "میں لوگوں کا مائنڈ سیٹ تبدیل کرنا چاہتی ہوں۔ بہت سے لوگوں کو نہیں معلوم کہ جینڈر اور جنسیت کیا چیز ہوتی ہے ۔میں لوگوں کو ہر جینڈر کے بارے میں جاننے پر آمادہ کروں گی۔ اس کوشش میں میرا خاندان میرے ساتھ نہیں ہے لیکن میرا خیال ہے کہ کمرشل فیشن کی دنیا میں ہم دوسرے لوگوں کی توجہ اپنی طرف مائل کر سکتے ہیں اور ان میں آگاہی پیدا کر سکتے ہیں۔ لوگ مجھے اس وقت ایک ایکٹوسٹ کے طور پر جانتے ہیں لیکن جلد وہ مجھے ایک ماڈل کے طور پر پہچانیں گے۔ ہر تجربے سے انسان طاقت، ہمت اور اعتماد حاصل کرتا ہے اور اند ر کا خوف جاتا رہتا ہے۔ اس سے انسان کو طاقت ملتی ہے کہ وہ مزید بڑے اقدام کر سکے۔ "اللہ اس خواجہ سرا کو مزید کامیابیاں عطا کرے!

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *