ووٹ نواز شریف کو ملیں، پالیسی عمران خان کی چلے، یہ نہیں ہو سکتا، خواجہ سعد رفیق

372

سیالکوٹ۔ شہر اقبال میں مسلم لیگ نون کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے اعلان کیا کہ الیکشن کی تیاری کا آغاز ہو گیا۔ انہوں نے عمران خان پر بھرپور طنز کرتے ہوئے کہا کہ وہ صرف خوابوں میں نواز شریف کا مقابلہ کر سکتے ہیں۔ وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا کہ مخالفین نے ہر مقام پر رکاوٹیں کھڑی کیں مگر نواز شریف کی قیادت میں ہمارا قافلہ منزل کی جانب رواں دواں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے خالی نعرے نہیں لگائے، صرف اقتدار کی جنگ نہیں لڑی، اس سال کے آخر تک تمام اندھیرے چھٹ جائیں گے۔ خواجہ آصف نے دعویٰ کیا کہ ملک سے دہشتگردی 80 فیصد کم ہو گئی ہے تاہم سب کو مل کر دہشتگردی کے خلاف لڑنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کی قیادت میں حکومت نے دلیرانہ فیصلے کئے۔ خواجہ آصف نے دعویٰ کیا کہ دنیا میں کہیں بھی کسی حکمران نے تین نسلوں کا حساب نہیں دیا، حساب مانگنے والے اپنا حساب دینے کا حوصلہ نہیں رکھتے۔ خواجہ آصف نے مخالفین کو مشورہ دیا کہ جلسوں میں نعرے لگانے والے اپنے گریبانوں میں جھانکیں، ہم ہر آزمائش میں سرخرو ہونگے۔ وزیر دفاع بولے حواس باختہ لوگ پارسائی کا سبق نہ دیں، ان کے اصل چہرے بے نقاب کریں گے۔ مسلم لیگ نواز کے ورکرز کنونشن سے وفاقی وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے بھی خطاب کیا۔ اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ 2013ء میں پورا ملک مسائل میں گھرا ہوا تھا، دہشتگردی کی آگ نے پاکستان کو جھلسا کر رکھ دیا تھا، ہم نے عوام سے مسائل ختم کرنے کے وعدے کئے تھے، ہم نے وعدوں کی تکمیل کیلئے کام شروع کیا تو حاسدین جلنے لگے اور چند ہزار مسلح افراد اسلام آباد لے آئے، مخالفین کے اقدام سے پاکستان کی جگ ہنسائی ہوئی۔ خواجہ سعد رفیق نے مخالفین پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ وہ لوگ تھے جن کا پاکستان بنانے میں کوئی کردار نہیں، جب ہم جیلیں کاٹتے تھے، یہ آوارہ گردی کرتے تھے۔ سعد رفیق نے دعویٰ کیا کہ ان کا مقابلہ ڈنڈوں سے کرتے تو سول وار شروع ہو جاتی، ہم نے صبر کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا۔ وزیر ریلویز نے مزید کہا کہ ایک شخص کہتا تھا قبریں کھودو، مگر ہم پھر بھی بولے نہیں ہیں، ایک ڈرامہ رچایا گیا کہ امپائر آئے گا، انگلی اٹھے گی، دودھ کا دھلا شخص آوازیں دیتا رہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایسا پہلی بار نہیں ہوا تھا، 1970ء میں بھی یہی ہوا تھا۔انہوں نے مخالفین کو للکارتے ہوئے مزید کہا کہ ووٹ نواز شریف کو ملیں، پالیسی عمران خان کی چلے، یہ نہیں ہو سکتا، چند لوگوں نے ملک کے نظام کو تباہ کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب ہم پر دھاندلی کے الزام لگائے گئے تو ہم سپریم کورٹ گئے، خدا نے ہمیں وہاں بھی سرخرو کیا مگر مخالفین نے وعدے کے باوجود الزام واپس نہ لیا، دوسروں پر انگلیاں اٹھانے والا خود اپنے معاہدے سے مکر گیا اور اللہ نے ہمیں کام سے روکنے کی سازش ناکام بنا دی:۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *